بہارپٹنہ

عید الاضحی کی مبارکباد !جانوروں کی قربانی سے پہلے اپنے نفس کو قربان کیجئے ، مفتی رضوان قاسمی

بیرول ( شمیم احمد رحمانی ) آج یکم ذی الحجہ کو نماز جمعہ سے قبل اپنے فکر انگیز خطاب میں جید عالم دین حضرت مولانا مفتی محمد رضوان عالم قاسمی استاد مدرسہ رحمانیہ افضلہ سوپول دربھنگہ ، بانی و متولی مسجد عائشہ رضی اللہ عنہا نزد بیرول ریلوے اسٹیشن نے مسلمانان عالم کو عید الاضحی کی مبارکباد پیش کرتے ہوئے کہا کہ اسلامی سال کا آخر ماہ ذی الحجہ و اول ماہ دونوں ماہ عظیم قربانیوں کی یاد دلاتا ہے ہماری قربانیوں کا مقصد رضائے الٰہی اور کلمہ حق کی سربلندی کے سوا کچھ نہیں !

 

اس لئے ان قربانیوں کے دور رس نتائج برآمد ہوئے جس کی وجہ سے آج تک لوگوں کو حق پرستی پر جمنے اور باطل کے سامنے ڈٹے رہنے کا حوصلہ مل رہا ہے انہوں نے اپنے فکر انگیز خطاب میں کہا کہ میں اپنی قوم کے لوگوں سے کہوں گا کہ چھوٹے بڑے جانوروں کی قربانی سے پہلے ہم لوگ اپنے اپنے نفس کی قربانی کریں تاکہ مسلم سماج میں بے دینی ، خود پسندی ، ظلم وزیادتی ، آپس میں بغض و عناد ، کینہ و حسد اور الزام تراشی کا جو جذبہ فروغ پا رہا ہے اس سے چھٹکارا ملے انہوں نے جاری اپنے خطاب میں کہا کہ سربلندی پانے کیلئے جب تک ہم اپنے نفس پرستی، خودغرضی اور انانیت کی قربانی نہیں دیں گے جانوروں کی قربانیوں کا مقصد حاصل نہیں ہوگا جید عالم دین حضرت مولانا مفتی محمد رضوان عالم قاسمی نے کہا کہ آپ جو کچھ بھی قربانی کرتے ہیں اس جانور کا کچھ بھی اللہ کے یہاں نہیں پہونچتا بلکہ صرف آپ کی نیت پہونچتی ہے اس لئے مسلمانوں کو چاہئے کہ وہ دین دنیا کے ہر معاملے میں پہلے اپنی نیت درست رکھیں ورنہ جو خدا عزت کا مالک ہے وہی ہماری بدنیتی کی وجہ سے کسی کے ہاتھوں ہمیں ذلیل و رسوا بھی کر سکتا ہے بڑے افسوس کی بات ہے کہ آج ہماری بدنیتی اور زبان و دل کے فاصلے کی وجہ سے ہی سماجی بگاڑ پیدا ہو رہا ہے معاشرتی برائیاں بڑھ رہی ہے یاد رکھیئے !

 

قومیں قربانیوں کے نتیجے میں آزادی و سربلندی حاصل کرتی ہے دنیا میں جس قوم نے بھی کامیابی و سربلندی حاصل کی ہے اس کے پیچھے اس قوم کے قربانیوں کی تاریخ ہے اس لئے آپ اپنے اسلاف کی قربانیوں کو یاد رکھیں یہ فتنہ کا دور ہے کسی کا دامن تھامنے یا کسی کی بات پر یقین کرنے سے پہلے اس کی زندگی اور اس کے کارناموں کو دیکھیں تاکہ آپ دھوکہ کھانے سے بچ سکیں ملک کی سیاست کا رخ تیزی سے بدلتا جا رہا ہے ایسا محسوس ہوتا ہے کہ ہمارے پیارے وطن کو کسی کی بری نظر لگ گئی ہے صدیوں پرانی آپسی بھائی چارے کی جگہ نفرت اور فرقہ پرستی کا ماحول بن رہا ہے ہمیں اس کو محبت اور اپنے بہتر اخلاق و کردار سے ختم کرنا ہے میں آپ تمام بھائیوں سے کہتا ہوں کہ ایک کلمہ کے پڑھنے والے ایک خدا کو ماننے والے رنگ و نسل ، زبان و علاقہ، ذات و برادری سے اوپر اٹھ کر ہر حال میں آپسی اتحاد و اتفاق کو یقینی بنائیں اس موقع پر جید عالم دین حضرت مولانا مفتی محمد رضوان عالم قاسمی نے مسلمانوں سمیت تمام باشندگان ملک سے ہندوستان کی صدیوں پرانی کثرت میں وحدت کی ڈور کو ٹوٹنے سے بچانے ، اپنے سے کمزوروں کو سہارا دینے ، بڑوں کا احترام اور چھوٹوں پر رحم و شفقت کی اپیل کرتے ہوئے ملک میں امن و امان قائم رکھنے دعا کی

ہماری یوٹیوب ویڈیوز

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button