عجیب و غریب

عجیب و غریب : اپنے ہی نابالغ بچے سے شادی کرنا چاہتے ہیں والدین کورٹ میں دائر کی درخواست

امریکہ کے نیو یارک (New York) میں ایک انوکھا معاملہ سامنے آیا ہے جہاں ایک والدین نے اپنے نابالغ بچے سے شادی کرنے کیلئے قانون طور پر درخواست دی ہے اور اسے ‘ذاتی خودمختاری’ (‘personal autonomy) کا معاملہ قرار دیا ہے۔ اس کے ساتھ والدین یہ بھی چاہتے ہیں کہ اس کے لئے کوئی قانون بنایا جائے تا کہ اس عمل میں کوئی رکاوٹ نہ ہو۔ نیویارک پوسٹ نے ایک رپورٹ میں کہا ہے کہ والدین نے اپنی اس انوکھی درخواست کی وضاحت کرتے ہوئے کہا ، "شادی کے مستقل بندھن کے ذریعے دو افراد ان کا رشتہ جو بھی ہو ، جذبات ، قربت اور روحانیت کی اعلی چوٹی کو حاصل کر سکتے ہیں۔”

عدالت میں داخل کاغذات میں نئی شادی شدہ کے جینڈر، عمر ، آبائی شہر یا ان کے رشتے کی نوعی جیسا کوئی بیورا بھی شاید ہی دیا گیا ہے۔ اپنی اس ‘ذاتی خود مختاری’ کے پیچھے کی وجہ بتاتے ہوئے والدین نے کہا کہ یہ درخواست سماج کے ایک بڑے حصے کیلئئ ‘اخلاقی ، معاشرتی اور حیاتیاتی طور کے خلاف ہے’۔
فائلنگ درخواست میں یہ واضح کیا گیا ہے کہ میاں بیوی بالغ ہیں اور انہوں نے یہ بھی بتایا ہے کہ ان کا رشتہ والدین اور بچے کے مابین ہے۔ تاہم ، مینہٹن کے اس خاندان اور ازدواجی قانون کے وکیل ایرک وربل کا کہنا ہے کہ یہ کبھی بھی ممکن نہیں ہے۔

عدالت میں داخل درخواست میں یہ واضح کیا گیا ہے کہ ہونے والے شوہر۔بیوی نابالغ ہیں اور اس کے ساتھ ہی انہوں نے یہ بھی شیئر کیا ہے کہ آپس میں ان کا رشتہ والدین اور بچے کا ہے۔ حالانکہ مین ہٹن کے اس کنبے اور ازدواجی قانون کے وکیل اٹارنی ایرک روبیل (Eric Wrubel) کا کہنا ہے کہ ایسا کبھی ممکن نہیں ہے۔

(نیوز۱۸ اردو کے شکریہ کے ساتھ)

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

Leave a Reply

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close