عجیب و غریب

انسانیت کو شرمسارکرنے والا واقعہ : ہائی وے پر جوڑے کویرغمال بناکر شوہر کے سامنے بیوی کی عصمت دری

باران ؍جے پور ، 15مارچ ( آئی این ایس انڈیا ) ہفتہ کی شب دس بجے کے لگ بھگ نیشنل ہائی وے 90 پر راجستھان کے باران میں اجتماعی عصمت ریزی کا شرمناک واقعہ پیش آیا ۔متأثرہ جوڑا موٹرسائیکل کے ذریعے گاؤں واپس آرہا تھا۔ ایک بوڑھے شخص سمیت پانچ افراد نے پہلے متأثرہ جوڑے کو روکا اور پھر اسے یرغمال بنا لیا۔ اس کے بعد وہ ان دونوں کو قریبی کھیت میں لے جایاگیا۔ یہاں ان لوگوں نے شوہر کے ہاتھ پاؤں بیوی کی ساڑی سے باندھ کرشوہر کے سامنے بیوی کے ساتھ اجتماعی زیادتی کی۔

واقعے کی اطلاع ملنے پر ایس پی ونیت کمار بنسل ، اے ایس پی وجے سورن کار موقع پر پہنچ گئے۔ انہوں نے متاثرہ خاتون کو اسپتال بھیجا اور اس کے ہاتھ پاؤں کھلوائے ۔متاثرہ جوڑا کے مطابق ہفتے کے روز شوہر اور 8 سالہ بہن کے ساتھ کام کھیڑا بالاجی درشن گئی تھی ۔ وہاں سے واپس آنے میں رات ہوگئی تھی۔اطلاع کیا مطابق موٹر سائیکل سے نیشنل ہائی وے 90 کے ذریعہ گاؤں کی طرف آرہے تھے۔ اسی دوران دو موٹرسائیکل سواروں نے ان لوگوں کا پیچھا کرنا شروع کیا۔

رات دس بجے کے قریب ملزمین نے انہیں گھیر لیا ، اس کی چھوٹی بہن کو سڑک پر ہی روک لیا۔جب بہن اور بھابھی نہ آئے، تو سڑک پر کھڑی لڑکی اندھیرے میں رونے لگی۔اس نے اشارہ سے وہاں سے گزرنے والی گاڑیوں کو روکا، بچی کو سڑک پر تنہا دیکھ کر ایک ٹرک ڈرائیور نے ٹرک روک لیا۔ بچی سے رونے کی وجہ پوچھی تو اس نے واقعات سنا یا۔ حادثہ پیش آنے پر ٹرک ڈرائیور نے شاہراہ سے گزرنے والے دوسرے ڈرائیوروں کو روک لیا،جب کچھ لوگ جمع ہوئے تو پورے واقعہ کی اطلاع پولیس کو دی گئی۔ وہاں موجود افراد لڑکی کے ساتھ اس کی بہن اور بہنوئی کی تلاش میں کھیتوں میں گئے اور آواز لگا یا، آس پاس کے کھیت میں گہری تلاشی لینے کے بعد متأثرہ عورت خستہ حالت میں پائی گئی۔ اسی دوران اس کا شوہر بھی ملا ، جس کے ہاتھ اور پیر اور منہ ساڑھی سے بندھے تھے۔ پولیس نے ایمبولینس کی مدد سے خاتون کو اسپتال میں داخل کرایا۔

پولیس کے مطابق اس معاملے میں کچھ مشتبہ افراد کو بھی گرفتار کرلیا گیا ہے۔ ایس پی نے بتایا کہ متاثرہ شخص کی اطلاع پر پولیس نے یرغمال ، اجتماعی زیادتی سمیت مختلف دفعات کے تحت مقدمہ درج کرلیا ہے۔خیال رہے کہ دو سال قبل بھی اسی طرح کا واقعہ پیش آچکا ہے، یہ واقعہ 6 دن بعد 2 مئی 2019 کو غازی پولیس اسٹیشن میں رپورٹ کیا گیا،اس واقعہ کی گونج پورے میں سنائی دی گئی تھی ۔ راہل گاندھی سمیت کئی رہنما متاثرہ سے ملنے گئے تھے۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

Leave a Reply

Back to top button
Close
Close