عجیب و غریب

ماں باپ نے صرف 10 ہزار روپے کے لیے 12 سالہ بیٹی کی شادی کروادی، یہ رقم کیوں چاہیے تھی؟ انتہائی دلخراش کہانی

نئی دہلی(ہندوستان اردو ٹائمز) بھارت میں غریب ماں باپ نے ایک بیٹی کے علاج کے لیے دوسری کم عمر بیٹی 10ہزار روپے میں بیچ ڈالی۔ انڈیا ٹائمز کے مطابق یہ افسوسناک واقعہ بھارتی ریاست آندھرا پردیش کے شہر نیلو ر میں پیش آیا ہے جہاں اس میاں بیوی کی بڑی بیٹی بیمار پڑ گئی۔ اس کا علاج کراتے جب ان کی جمع پونجی ختم ہو گئی تو وہ بے بس ہو گئے۔

غریب ماں باپ کی اسی بے بسی کا فائدہ ان کے 46سالہ ہمسائے شینا سوبایا نے اٹھایا۔ شینا کی بیوی کا انتقال ہو چکا تھا اور وہ اکیلا رہ رہا تھا۔ اس نے ان ماں باپ کو لالچ دیا کہ وہ اپنی چھوٹی بیٹی، جس کی عمر محض 12سال تھی، کو اس کے ساتھ بیاہ دیں، جس کے عوض وہ انہیں 10ہزار روپے دے گا۔ ماں باپ اس پر رضامند ہو گئے اور بچی کی شادی اس کے ساتھ کر دی۔

شینا کم عمر بچی کو بیاہ کر اسے ویداولر منڈل دماپور نامی قصبے میں اپنے رشتہ داروں کے گھر لے گیا۔ جہاں دو دن بعد ہمسایوں نے رات کے وقت لڑکی کی چیخ و پکار سن کر پولیس کو اطلاع دے دی۔ پولیس نے بچی کو بازیاب کرکے ملزم کو گرفتار کر لیاہے۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close