عجیب و غریب

میگھالیہ: 80 سالہ شخص کو جادو کرنے کا الزام لگا کر زندہ دفن کیا، 8 افراد گرفتار

گوہاٹی،14 ؍اکتوبر( آئی این ایس انڈیا ) میگھالیہ میں ایک 80 سالہ شخص کو اس کے رشتہ داروں نے زمین میں زندہ دفن کردیا۔ پولیس کا کہنا ہے کہ لواحقین کو اس شخص پر جادو،ٹونا کرنے کا شک تھا ، جس کے بعد انہوں نے زبردستی اسے زمین میں دفن کردیا۔ اس معاملے میں آٹھ افراد کو گرفتار کیا گیا ہے، ان میں سے تین افراد اس شخص کے بھتیجے ہیں۔ پولیس نے بتایا کہ پانچ فٹ گہرے گڑھے سے لاش کو باہر نکالنے پر دیکھا گیاکہ اس شخص کے ہاتھ پاؤں بندھے ہوئے تھے اور اس کا چہرہ ڈھانپ دیا گیا تھا۔ لاش پوسٹ مارٹم کے لئے بھیج دی گئی ہے۔ذرائع کے مطابق ایس پی ہربرٹ لنگدوہ نے کہا کہ یہ واقعہ 7 اکتوبر کی رات کو پیش آیا۔ اس معاملے میں آٹھ افراد کو گرفتار کیا گیا ہے۔ پولیس کا کہنا تھا کہ انہیں اس قتل میں خاندان کے 18 افراد کے ملوث ہونے کا شبہ ہے۔۷؍اکتوبر کو ان کے رشتہ داروں نے زبردستی مغربی خاصی پہاڑی گاؤں سے زبردستی اٹھالیا تھا ۔ اس کے ایک دن بعد اس کے اہل خانہ نے گاؤں کی انتظامیہ کو اطلاع دی، جس کے بعد معاملہ پولیس تک پہنچا۔ اس معاملے میں تین اہم ملزم بھتیجے ڈینیل، جیلس اور ڈیفرویل کو 11 اکتوبر کو گرفتار کیا گیا تھا۔ اورباقی پانچ ملزمین کو اگلے ہی دن گرفتار کرلیا گیا۔پولیس افسر نے بتایا کہ ملزم سے تفتیش کے دوران لاش کا سراغ لگا یا گیا ، جس کے بعد اسے باہر لے جایا گیا۔ تدفین کے بعد جسم لاش سے ڈھانپ دیاگیا تھا اور اس کے اوپر آر آئی پی لکھ کر کراس رکھا ہوا تھا۔ متوفی کے ہاتھ پیچھے کی طرف بندھے ہوئے تھے اور ان کی ٹانگیں بوریوں میں ڈال کر رسیوں سے باندھی گئی تھیں۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close