عجیب و غریب

بنگال:بی جے پی لیڈر دلیپ گھوش کا متنازعہ بیان، احتجاج کے لئے منشیات کا استعمال کرتی ہیں خواتین

کولکاتہ:09؍مارچ ( ذرائع ۔ ہندوستان اردو ٹائمز ) مغربی بنگال کے ریاستی بی جے پی صدر نے ایک بار پھر متنازعہ بیان دیا ہے۔دلیپ گھوش نے کہا ہے کہ خواتین کا ’غیر شائستہ‘ کام کرنا تکلیف دہ ہے۔گھوش کے مطابق ٹیگور کے گیتوں کا توڑ مروڑ کر ویڈیو بنانا، منشیات کا استعمال کرکے احتجاج کرنا اور اشتعال انگیز نعرے لگانا، یہ سب ’غیر شائستہ‘ کام ہیں۔ان کے بیان کو ٹی ایم سی نے ریاست کی خواتین کی توہین بتایا ہے۔ بی جے پی ریاستی صدر دلیپ گھوش کولکاتہ کے گولف گرین علاقے میں مقامی لوگوں کے ساتھ چائے پر بحث کر رہے تھے۔اس دوران انہوں نے کہاکہ فکر کی بات ہے کہ کس طرح کچھ خواتین اپنے خود اعتمادی کے تئیں لاپرواہ ہو رہی ہیں۔انہیں اپنے وقار، تہذیب کی ذرا بھی پرواہ نہیں ہے۔ویڈیو میں ان کے ’غیر شائستہ‘ کام کرتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے۔میں کسی کو الزام نہیں دے رہا ہوں بلکہ یہ معاشرے کا زوال ہے۔کچھ دنوں تک احتجاجی مظاہرہ ہوتا ہے اور خواتین کو اشتعال انگیز نعرے لگانے کے لئے بیٹھا دیا جاتا ہے۔ہمیں سوچنا چاہئے کہ سماج کہاں جا رہا ہے۔انہوں نے اندیشہ ظاہر کیا کہ اگر اسی طرح ان کا رویہ رہا تو خواتین تشدد کا شکار ہو سکتی ہیں۔لہٰذا والدین، کالج ،اسکول عہدیداروں اور وزیر تعلیم کو معاشرے کے زوال پر غور کرنا چاہئے۔وہیں ان کے بیان پر سخت رد عمل ظاہر کرتے ہوئے ممتا بنرجی کی پارٹی کے سینئر لیڈر نے مورچہ سنبھالا۔شہری ترقی کے وزیر فرہاد حکیم نے دلیپ گھوش کے بیان کو غیر مہذب اور وحشیانہ بتایا ہے۔انہوں نے نشانہ لگاتے ہوئے کہا کہ دلیپ گھوش نے یوم خواتین پر ریاست کی خواتین کی توہین کی ہے۔دلیپ گھوش نے پہلے بھی شاہین باغ میں شہریت قانون کی مخالفت میں مظاہرین پر متنازعہ بیان دیا تھا۔

مزید پڑھیں

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

جواب دیجئے

Back to top button
Close
Close