ممبئی

شیوسینا کے راجیہ سبھا ایم پی سنجے راوت ای ڈی کی حراست میں

ممبئی،31جولائی (ہندوستان اردو ٹائمز) ای ڈی نے شیوسینا لیڈر سنجے راوت کو زمین گھوٹالہ معاملے میں حراست میں لے لیا ہے۔ای ڈی کی ٹیم اتوار (31 جولائی 2022) کی صبح سنجے راوت کے گھر پہنچی تھی۔ ای ڈی کی ٹیم پترا چاول گھوٹالے میں ثبوت جمع کرنے سنجے راوت کے گھر پہنچی اور ان سے 9 گھنٹے تک پوچھ گچھ کی۔ 1034 کروڑ سے زیادہ کے پترا چاول اراضی گھوٹالہ معاملے میں ای ڈی کی ٹیم نے 27 جولائی 2022 کو سنجے راوت کو سمن جاری کیا تھا، لیکن وہ پیش نہیں ہوئے۔

سنجے راوت پر بھی اس تحقیقات میں تعاون نہ کرنے کا الزام ہے۔ جس کے بعد ای ڈی ان کے گھر پہنچ گئی۔ اس سے پہلے یکم جولائی 2022 کو سنجے راوت سے ای ڈی ٹیم نے تقریباً 10 گھنٹے تک پوچھ گچھ کی تھی۔ذرائع کے مطابق جب جانچ ایجنسی نے ان سے ای ڈی آفس جانے کو کہا تو انہوں نے کہا کہ وہ موجودہ رکن پارلیمنٹ ہیں۔انہوں نے 7 اگست تک کا وقت مانگا تھا۔ شیوسینا لیڈر نے کہا کہ ای ڈی کو اس کی اطلاع دی گئی تھی۔

اپنے وکیل کے ذریعہ ای ڈی کو بھیجے گئے خط میں انہوں نے کہا تھا کہ ایک ذمہ دار رکن پارلیمنٹ کے طور پر انہیں پارلیمنٹ کے اجلاس میں شرکت کرنی ہے،اس لئے وہ 20 اور 27 جولائی کو ای ڈی کے سامنے پیش نہیں ہوئے۔دوسری طرف ای ڈی کا کہنا ہے کہ حالیہ دنوں میں انہیں رقم کے لین دین میں سنجے راوت کے ملوث ہونے کے ثبوت ملے ہیں۔ اس کے ساتھ جانچ ایجنسی کو ان کے گھر سے کچھ دستاویزات بھی برآمد کرنے تھے، اس لیے ای ڈی نے یہ چھاپہ مارا ہے۔ شیوسینا لیڈر کی گرفتاری کی خبر ملتے ہی حامی ان کے گھر کے باہر جمع ہو گئے اور نعرے بازی شروع کر دی۔

ہماری یوٹیوب ویڈیوز

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button