شوبز

لوگوں کی زندگی بچانا شبیہ بنانے سے زیادہ ضروری‘ مودی حکومت کو انوپم کھیر نے بھی نہیں بخشا

بالی وڈ اداکار انوپم کھیر جووزیر اعظم نریندر مودی کی تعریف کرتے نہیں تھکتے انہوں نے کورونا کےموجودہ بحران میں حکومت کی تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ کورونا کےاس بحران کےدوران حکومت پھسل گئی ہےاور حکومت کو ذمہ دار ٹھہرانا ضروری ہے۔انوپم کھیر نے کہا ہے کہ حکومت کہیں نہ کہیں ناکام ہوئی ہےاور انہیں اس وقت سمجھنا چاہئے کہ شبیہ بنانے سے زیادہ لوگوں کی زندگی بچانا ہے۔

اے بی پی نیو ز پر شائع خبر کےمطابق انوپم کھیر نےایک ٹی وی چینل کو دئےگئےانٹرویو میں یہ بات کہی ہے۔ انوپم کھیر سےجب حکومت کی شبیہ بنانےکی کوشش اور اسپتالوں میں ضروری دواؤں کی قلت اور ندیوں میں بہتی لاشوں کو لےکر سوال پوچھا گیاتو انہوں نے کہا کہ’’مجھے لگتا ہے کہ زیادتر معاملوں میں تنقید درست ہےاور حکومت کے لئے یہ ضروری ہےکہ وہ اس موقع پر ایسا کام کرے جس کے لئے ملک کےعوام نے اسے منتخب کیا ہے۔ مجھے لگتا ہے کہ صرف غیر حساس شخص ہی ایسے حالات سےاثر انداز نہیں ہوگا ۔ ندیوں میں بہتی لاشیں ، لیکن دوسری سیاسی پارٹیوں کے ذریعہ ان حالات کااپنے فائدہ کے لئےاستعمال کرنا بھی مناسب نہیں ہے۔‘‘

انوپم کھیر نےاس انٹرویو میں بڑی باتیں کہی ہیں۔ انہوں نے کہیں نہ کہیں یہ اعتراف کیا ہے کہ حکومت کی توجہ شبیہ بنانےپر زیادہ ہے۔ساتھ میں جب انہوں نے یہ کہا کہ ایک غیر حساس شخص ہی ایسے حالات سےاثر انداز نہیں ہوگا تو ان کے اس بیان نے پوری مودی حکومت کو کٹگھرے میں کھڑا کر دیا ہے۔ انوپم کھیر نے اس میں مزید کہا کہ ’’ہمیں شہری کو طور پر غصہ کرناچاہئے اور جو کچھ ہوا ہے اس کے لئے حکومت کوذمہ دار ٹھہرانا اہم ہے۔‘‘ حکومت کو ذمہ دار ٹھہرانا دراصل حکومت کے خلاف ان کے غصہ کو ظاہر کرتا ہے۔

انوپم کھیر کےایسے بیان سے عوام کے ایک بڑے طبقہ میں حیرانی ہے۔ دو ہفتہ پہلے ہیں کھیر نے کووڈ کنٹرول پر حکومت کی تنقید کے جواب پر ایک کمنٹ کیا تھا ’’آئے گا تو مودی ہی‘‘ جس کے بعد سوشل میڈیا پر ان کو کافی ٹرول کیا گیا تھا۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

Leave a Reply

Back to top button
Close
Close