دیوبند

شادی شدہ خاتون کی پٹائی سے اسقاط حمل

دیوبند،یکم اپریل(رضوان سلمانی) علاقہ کے گائوں رسول پور کی باشندہ شہزاد کی بیٹی صبیحہ نے الزام لگایا کہ اس کے شوہر اور اس کے سسرال والوں نے مارپیٹ کرکے اسقاط حمل کرانے اور گلا دباکر اس کا قتل کرنے کی کوشش کرنے کا الزام لگایا۔

متاثرہ کی شکایت پر پولیس نے شوہر سمیت چار افراد کے خلاف مختلف دفعات کے تحت مقدمہ درج کر لیا ہے۔صبیحہ نے کوتوالی میں درج کرائی گئی رپورٹ میں بتایا کہ اس کی شادی 15 مئی 2020 کو مظفر نگر کے جڑودہ نارا گاؤں کے رہنے والے گلشاد کے ساتھ ہوئی تھی۔

دیوبند بریکنگ نیوز

متاثرہ نے کوتوالی میں درج مقدمے میں بتایا کہ اس کے شوہر سمیت اس کے سسرال والے اسے کم جہیز کے لیے مسلسل ذہنی اور جسمانی تشدد کا نشانہ بنا رہے تھے۔ اس دوران گلا دبانے اور جان سے مارنے کی کوشش کی وجہ سے اس کا اسقاط حمل بھی ہو گیا۔ متاثرہ کی شکایت پر پولیس نے مقدمہ درج کرکے کارروائی شروع کردی۔

ہماری یوٹیوب ویڈیوز

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button