دیوبند

سڑک حادثہ میں افتخار عثمانی کے شیر خوار بیٹے کی موت

چلکانہ روڑ پر ہونے والے سڑک حادثہ میں افتخار عثمانی اور انکی اہلیہ شدید طور پر زخمی

دیوبند، 8؍ اپریل (رضوان سلمانی) محلہ ابوالمعالی کے باشندہ اور اللہ رکھا مارکیٹ کے مالک محمد معظم عثمانی کے صاحبزادہ گذشتہ رات چلکانہ روڑ سہارنپور میں اپنی فیملی سمیت سڑک حادثہ کا شکار ہوگئے جس کے نتیجہ میں ان کے 9؍ماہ کے شیر خوار بیٹے کی موت ہوگئی۔واضح ہو کہاافتخار عثمانی(افّو) اپنی اہلیہ اور شیر خوار بیٹے کے ساتھ سہارنپور چلکانہ روڑ پر اپنی سسرال گئے تھے۔تراویح کے بعد وہ اپنی گاڑی سے اہلیہ اوربچے کے ساتھ واپس آرہے تھے کہ چلکانہ روڑ پر ہی ایک ٹرک سے اپنی گاڑی کو بچانے کی کوشش میں ان کی گاڑی بجلی پول سے ٹکرا گئی۔

اس حادثہ میںافتخار عثمانی ان کی اہلیہ اور 9؍ماہ کا بیٹا شدید طور پر زخمی ہوگئے۔حادثہ کے بعد ایک گھنٹہ سے زائد وقت تک انہیں کوئی مدد نہیں مل سکی اور تینوں زخمی حالت میں مدد کے لئے پکارتے رہے اسی درمیان کسی گاؤں کے پردھان ادھر سے گذرے تو انہوں نے اپنی گاڑی روک لی اور انسانی ہمدردی کا ثبوت دیتے ہوئے تینوں زخمیوں کو اسپتال پہنچایا جہاں دوران علاج ان کے شیر خوار بیٹے کی موت واقع ہوگئی۔ماہ مقدس میں اس حادثہ سے محمد معظم کے اہل خانہ،عزیز واقارب بہت زیادہ صدمہ میں ہیں۔مونس افتخار اور ان کی اہلیہ کے سر اور چہروں پر بہت زیادہ زخم ہیں جن کا علاج فیضان ملٹی اسپیشیلٹی ہاسپٹل دیوبند میں چل رہا ہے۔

نماز فجر کے بعد فوت ہوجانے والے بچہ کی تدفین آبائی قبرستان میں کی گئی۔متاثرہ خاندان سے مسلم فنڈ ٹرسٹ کے منیجر سہیل صدیقی ،سید آصف حسین ،انعام قریشی ،ذیشان عمردیگر ارکان نے حادثہ پر صدمہ کا اظہار اور بچہ کی موت پر اظہار تعزیت کیا اس کے علاوہ عید گاہ وقف دیوبند کے متولی محمد انس صدیقی،نیتا راحت خلیل،محمد ذیشان،حیدر علی،راحیل عثمانی،محمد انجم،قاری وامق عثمانی،محمد ہلال،فہیم صدیقی،حافظ محمدسعد،شبن عثمانی، علی احمد اور محمد عظیم سمیت بڑی تعداد میں علاقہ کے افراد نے متاثرہ خاندان سے اظہار ہمدردی اور اظہار تعزیت کیا اور صبر جمیل کی دعا کی۔

ہماری یوٹیوب ویڈیوز

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button