دہلی

راجیہ سبھاسے سنجے سنگھ بھی معطل کردیئے گئے ،کاغذ پھاڑنے کا الزام

نئی دہلی ، 27 جولائی (ہندوستان اردو ٹائمز) عام آدمی پارٹی کے راجیہ سبھا ممبر پارلیمنٹ سنجے سنگھ کو پارلیمنٹ کی کارروائی سے معطل کر دیا گیا ہے۔ یہ کارروائی سنجے سنگھ کو کاغذ پھاڑ کر اسپیکر کی کرسی کی طرف پھینکے جانے اور نعرے لگانے کے بعد کی گئی ہے۔ سنجے سنگھ گجرات میں جعلی شراب پینے سے ہونے والی اموات کے بارے میں سوال پوچھ رہے تھے۔ وہ مسلسل اسی بات پر بضد تھے اور نعرے بھی لگا رہے تھے۔

گجرات میں جعلی شراب پینے سے 37 افراد ہلاک جبکہ 50 سے زائد افراد کو علاج کے لیے اسپتال میں داخل کرایا گیا۔اب آپ ایم پی جمعہ کو راجیہ سبھا کی کارروائی میں حصہ نہیں لے سکیں گے۔ اس سے قبل منگل کو پارلیمنٹ کا اجلاس بہت ہنگامہ خیز رہا، اپوزیشن ارکان کے شور شرابے کی وجہ سے راجیہ سبھا میں کام نہیں ہو سکا۔ اپوزیشن اراکین جی ایس ٹی، مہنگائی اور کئی مسائل پر بحث کا مطالبہ کرتے ہوئے ڈپٹی چیئرمین ہری ونش کی نشست پر پہنچ گئے اور انہیں پلے کارڈ دکھا کر زور زور سے نعرے لگانے لگے۔اس سے قبل منگل کو 19 ارکان پارلیمنٹ کو غیر مہذب رویے پر ایک ہفتے کے لیے معطل کر دیا گیا تھا۔

اپوزیشن ایوان کے اندر مہنگائی کی مخالفت کر رہی تھی۔ جن ممبران پارلیمنٹ کو معطل کیا گیا ہے ان میں مرلیدھرن، ندیم الحق، ڈولا سین، عبیر بسواس، موسم نور، سشمیتا دیو، شانتا چھتری، محمد عبداللہ، اے اے رحیم، کنی موزی، شانتنو سین، ابھی رنجن بسوار، ندیم الحق، دامودر راؤ، سندوش کمار شامل ہیں۔ ، ایل یادو، گرنجن، این آر ایلنگو اور وی سیواداسن۔

ہماری یوٹیوب ویڈیوز

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button