دیوبند

کسانوں کے حقوق کی لڑائی اب کسانوں کی چاربڑی تنظیمیں متحد ہوکر لڑیں گی: راج کشور شرما

دیوبند، 9؍ جولائی (رضوان سلمانی) بھارتیہ کسان یونین کے قومی صدر دیوبند پہنچے تو ان کے استقبال کے لئے موجود کسانوں نے ان کا زبردست استقبال کیا۔ اس موقع پر قومی صدر نے کسانوں کے مسائل کے لئے کسانوں کی چاروں تنظیموں کے ایک ساتھ مل کر تحریک چلانے کا اعلان کیا۔ تفصیلات کے مطابق بھارتیہ کسان یونین کے قومی صدر راج کشور شرما نے کسانوںسے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پورے ملک کو اناج مہیا کرانے والے کسانوں کے حقوق کی لڑائی اب کسانوں کی چاربڑی تنظیمیں متحد ہوکر لڑیں گی۔

انھوں نے اعلان کیا کہ کسانوں کے حقوق کی بازیابی کے لئے 15جولائی سے تحریک شروع کی جائے گی۔ راج کشور جمعرات کے روز مقبرہ روڑ پر منعقدہ ایک میٹنگ میں شریک کارکنان سے خطاب کرنے پہنچے۔ اپنے خطاب کے دوران انھوں نے کہا کہ آنے والی 15جولائی سے کسانوں کی چار بڑی تنظیمیں متحدہوکر کسانوں کے حقوق اور ان کے مسائل کے لئے تحریک شروع کریں گی۔ نوجوان قومی صدر ستیش بھاردواج نے کہا کہ پورے ملک میں کسانوں کا واحد طبقہ ہے جو پورے ملک کی عوام کی مفاد میں کام کرتاہے۔

انھوں نے کہا کہ کسان آپسی بھائی چارہ کے ذریعہ ملک میں پھیلنے والی ذات برادری کی تفریق اور مذہبی منافرت کو ختم کرنے کا کام کریںگے۔ تاکہ ہماراملک ترقی پذیر ممالک کی صف میں شامل ہوسکے۔ کسان تنظیم کے سہارنپور ضلع صدر جمال ناصر نے کارکنان سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ شہر سے 15کلومیٹر کے فاصلہ پر این ایچ 58ہائی وے ٹول فری ہے، جبکہ اسٹیٹ ہائی وے59پرزبردست ٹول وصول کیاجارہاہے، جو اس علاقے لوگوں کا کھلا استحصال ہے۔ میٹنگ کے دوران آکاش شرما، جنید صدیقی، رجت شرما، آکاش ٹھاکر، وشال تیاگی اور ابھیشیک کشیپ کے علاوہ کسان تنظیموں کے سینکڑوں کارکنان موجودرہے۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

Leave a Reply

Back to top button
Close
Close