دیوبند

دیوبند میں کورونا وائرس ایک بار پھر تیزی سے بڑھ رہا ہے : جمال الدین انصاری نے محکمہ صحت کی ٹیم کو دیا سیمپل

دیوبند، 30؍ جون (رضوا ن سلمانی) دیوبند میں کورونا وائرس ایک بار پھر تیزی سے بڑھ رہا ہے۔ منگل کے روز گاؤں لال والا کے ایک ہی خاندان سے تعلق رکھنے والے چھ افراد کی کورونا رپورٹ مثبت آنے سے محکمہ صحت میں کھلبلی مچ گئی، تمام متاثرہ افراد کو کوڈ9 1 اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے۔سی ایچ سی سپرنٹنڈنٹ ڈاکٹر اندراج سنگھ نے بتایا کہ تین دن پہلے ہریدوار سے لوٹے لال والا گاؤں کے باشندہ کی رپورٹ آنے کی مثبت آنے کے بعد دو افراد اور اس کے کنبے کے دو بچوں سمیت چھ افراد کو چھ افراد کے سیمپل لیکر جانچ کے لئے بھیجے گئے تھے۔ منگل کے روز مذکور تمام کی رپورٹ پوزیٹیو آئی ہے۔

انہوںنے بتایا کہ تمام متاثرہ افراد کو پلکھنی کے میڈیکل کالج میں داخل کرایا جارہا ہے۔ اس دوران لال والا گاؤں میں متاثرہ افراد کی تعداد میں اضافے کی وجہ سے دیہی لوگوں میں خوف کا ماحول ہے اور مقامی انتظامیہ میں بھی کھلبلی مچی ہوئی ہے۔

انتظامیہ نے متاثرہ افراد کے گھروں کو سیل کر کے ان کو سینٹائز کیاہے۔ ادھر سہارنپور سے رکن پارلیمنٹ حاجی فضل الرحمن اور ان کے خاندان کے کئی افراد کو کورونا ہونے کی تصدیق ہونے کے باوجود ان کے قریبیوں اور ان سے حال میں ملنے والوں کی سیمپل لینے کا سلسلہ جاری ہے۔ اسی کے تحت آج چیئرمین ضیاء الدین انصاری کے بیٹے جمال انصاری اور بی ایس پی کے شہر صدر فیروز گوڑ کے سیمپل جانچ کے لئے بھیجے گئے۔ وہیں اس سے قبل سابق رکن اسمبلی معاویہ علی کاسیمپل لیا گیا تھا ،گزشتہ روز ان کی رپورٹ نگیٹیو آئی تھی ،جس کے بعد ان کے متعلقین نے راحت کی سانس لی تھی۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

جواب دیجئے

Back to top button
Close
Close