دیوبند

اسپتال میں صفائی کا نظم نہ ہونے سے بی جے پی کارکنان نے کیا غصہ کا اظہار : کارکنان نے اسپتال کا گھیرائو کیا تو ڈاکٹروں نے ایمرجنسی خدمات کی بند

دیوبند، 29؍ جون (رضوان سلمانی) سی ایچ سی کے زچہ بچہ وارڈ میںپینے کے پانی کانظام نہ ہونے اور بیت الخلاء کے اندر گندگی کی شکایت پر ہسپتال پہنچے بی جے پی کے لیڈروںنے ہسپتال کے ناقص انتظامات پر غصہ کا اظہار کیا، بی جے پی کارکنان کی حرکت پر سی ایچ اہلکار بھڑک گئے اور دیکھتے ہی دیکھتے انہوں نے ایمرجنسی سہولیات بند کرکے ہڑتال کااعلان کردیا،جس کے بعد ہسپتال پہنچے علاقائی رکن اسمبلی کنور برجیش سنگھ نے دونوں فریق کے درمیان صلح صفائی کرائی،ساتھ ہی انتباہ دیا کہ صفائی نظام سے کسی بھی طرح کا سمجھوتہ نہیں کیاجائیگا۔

آج بی جے پی کے شہر صدر وپن گرگ اور شہر سکریٹری رام موہن سینی و ارون گپتا سمیت دیگر بی جے پی کارکنان سرکاری ہسپتال کے زچہ بچہ وارڈ میں داخل مریضوں کے اہل خانہ کی شکایت پر ہسپتال پہنچے،اس دوران زچہ بچہ وارڈ کی ڈاکٹر سے ان کی کہاسنی ہوگئی تو انہوں نے ہسپتال انچارج ڈاکٹر اندراج سنگھ سے ملنے کو کہا،جس کے بعد بی جے پی لیڈر ہسپتال انچارج کے آفس پہنچے لیکن انہیں وہاں نہ پاکر وہ مشتعل ہوگئے اور وہیں بیٹھ گئے ،ادھر ہسپتال اسٹاف بھی ایمرجنسی سہولیات بندٹھپ کرکے ہڑتال پر بیٹھ گیا،جس سے پولیس انتظامیہ میں بھی کھلبلی مچ گئی۔

واقعہ کے بابت اطلاع ملنے پر بی جے پی کے علاقائی رکن اسمبلی کنوربرجیش سنگھ موقع پر پہنچے ،اس دوران ہسپتال میں موجود مریضوں نے ہسپتال اسٹاف پر لاپرواہی اور بدتمیزی کرنے کا الزام عائد کیا، مریضوں کے تیمارداروںنے اس دوران ہسپتال میں گندگی کی بھی شکایت کی۔ رکن اسمبلی نے کارکنان اور عہدیدان کو ٹھنڈا کرتے ہوئے ہسپتال انچارج سے بات کرتے ہوئے ہسپتال میں صفائی ستھرائی کا بہتر بندوبست کرنے کے ساتھ ساتھ مریضوں کا خاص خیال رکھنے کی نصیحت دی۔ ساتھ ہی دونوں فریق کے درمیان صلح صفائی کرائی۔ اس دوران بی جے پی کے درجنوں کارکنان موجودرہے۔ اس بابت سی ایچ سی انچارج ڈاکٹر اندرراج سنگھ نے بتایا کہ دو دن قبل پانی کی موٹر خراب ہوگئی تھی، جسے ٹھیک کرایا جارہاہے، انہوں نے کہاکہ میونسپل بورڈ کی پانی کی سپلائی کرائی جارہی ہے اور اب پورا معاملہ سلجھ گیاہے۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

جواب دیجئے

Back to top button
Close
Close