دیوبند

حکومت کسانوں کے لیے فوری طور پر کھاد اور یوریا مہیا کرائے: چودھری پروندر کمار

دیوبند، 16؍ جون (رضوان سلمانی) گناّ سمیتی کے سابق چیئرمین اور ایس پی لیڈرچودھری پرویندر کمار نے کہا کہ مرکز اور ریاست میں بی جے پی حکومت کسان مخالف ہے، اچھے دن کا خوا ب دکھا نے والی حکومت کسانوں کو ان کی فصلوں کے لئے یوریا کھاد مہیا تک نہیں کرارہی ہے۔

گاؤں تلہیڑی بزرگ میں ایف ایس ایس کے چیئرمین نریندر سنگھ کی رہائش گاہ پر منعقد میٹنگ میں خطاب کرتے ہوئے چودھری پرویندر کمار نے کہا کہ کوآپریٹیو سمیتیوں میں گذشتہ ایک ماہ سے یوریا کھاد نہیں ہے۔ جبکہ ان دنوں دھان کی بوائی کی وجہ سے کسان کھاد نہ ملنے کی وجہ سے پریشان ہیں۔

انہوں نے کہا کہ اس بار موسلا دھار بارش اور ژالہ باری کی وجہ سے کسانوں کی فصل برباد ہوگئی۔ لیکن حکومت نے کسانوں کو معاوضہ بھی نہیں دیا۔ فصلوں کی بربادی کے سبب کسان خودکشی کرنے پر مجبور ہیں۔ چودھری پرویندر نے کہا کہ کاشتکاروں کو 14 دن میں گنے ّکی قیمت ادا کرنے کا وعدہ بھی جھوٹا ثابت ہوا ہے جبکہ گنے کی فصل کا پیسہ کسانوں کے ذریعہ معاش کا ایک ذریعہ ہے۔

وہیں لاک ڈاؤن میں گنے کی رقم کی عدم ادائیگی اور اب یوریا کھاد کی قلت کسانوں کو کاشتکاری چھوڑنے پر مجبور کررہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ اگر ان مسائل کو جلد حل نہ کیا گیا تو ایس پی کارکنان جلد ہی گنیّ سمیتی میں احتجاج کرنے پر مجبور ہوجائیں گے۔ اس دوران نریندر سنگھ اور چودھری امت سنگھ نے بھی اپنے خیالات کا اظہار کیا۔اس دوران کارکنان موجودرہے۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

Leave a Reply

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close