دیوبند

دیوبند : بینکوں کے باہر سوشل ڈسٹینسنگ کے اصولوں کی اڑی دھجیاں

دیوبند، 27؍ مئی (رضوان سلمانی) تقریباً ایک مہینے سے بند بینکوں میں عام صارفین کو لین دین کی چھوٹ دیئے جانے کے بعد آج بینکوں اور اے ٹی ایم پر بھیڑ جمع رہی ۔ لوگوں میں افراتفری کے درمیان سوشل ڈسٹینسنگ کے اصولوں کی جم کر دھجیاں اڑائی گئیں ۔

کرونا کے مریضوں کی بڑھتی تعداد کو دیکھتے ہوئے ایک ماہ قبل انتظامیہ نے پورے شہر کو سیل بند کرتے ہوئے بازاروں اور بینکوں کو پوری طرح سے بند رکھنے کے احکامات جاری کئے تھے جس کی وجہ سے لوگ بینک لین دین نہیں کرپارہے تھے ۔

آج بینک عام صارفین کے لئے کھولے گئے تو بینک صارفین کا مجمع بینکوں میں لگ گیا اور بینکوں کے باہر لمبی لمبی قطاریں لگ گئیں، حالانکہ بینکوں کے باہر سوشل ڈسٹینسنگ کا دھیان رکھتے ہوئے گولے بنائے گئے ہیں لیکن ان کو درکنار کرکے صارفین میں افراتفری مچی رہی ، کم وبیش یہی حالت اے ٹی ایم اور بینک گراہک مراکز کے باہر بھی رہی۔ رقم نکالنے کے لئے لوگ لمبی لمبی قطاروں میں لگے نظر آئے۔

جن دھن اکائونٹ سے رقم نکالنے کے لئے بھی بڑی تعداد میں لوگ بینکوں میں پہنچے ، بینکوں کے باہر پولیس اہلکار تو تعینات رہے لیکن اس کے باوجود نظم نہیں بن پایا۔ اس سلسلے میں تھانہ انچارج وائی ڈی شرما نے بتایا کہ بینکوں کے باہر اضافی پولیس فورس تعینات کرتے ہوئے سوشل ڈسٹینسنگ پر سختی کے ساتھ عمل کرایا جائے گا۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

جواب دیجئے

Back to top button
Close
Close