دیوبند

رمضان المبارک کی برکات کو زیادہ سے زیادہ سمیٹنے کی کوشش کریں: مولانا حسن الہاشمی

دیوبند، 25؍اپریل (رضوان سلمانی) رمضان المبارک کا مقدس مہینہ کا آغاز ہوچکاہے، اسی ماہ مبارک میں اللہ تعالیٰ قرآن کریم جیسی مقدس کتاب کا نزول فرمایا۔رمضان المبارک کے تقدس اور اس کی برکات کے سلسلہ میں مولانا حسن الہاشمی نے بیان کرتے ہوئے کہا کہ شعبان کی آخری تاریخوں میں نبی اکرم حضرت محمد مصطفی صلی اللہ علیہ وسلم ممبر پر تشریف فرما ہوئے اور انہوں نے ارشاد فرمایا کہ اے لوگوں پر ایک عظیم اور مبارک مہینہ سایۂ فگن ہونے والا ہے، ایسا مہینہ جس میں ایک ایسی رات ہے جو ایک ہزار مہینوں سے بڑھ کر ہے۔ یعنی اس ایک رات میں عبادت کا ثواب ایک ہزار مہینوں کی عبادت سے زیاد ہ ملتا ہے، اللہ تعالی نے اس ماہ مبار ک کے دنوں کا روزہ فرض اور راتوں کی عبادت نفل قرار دی ہے۔ حضور اکرم نے فرمایا کہ جو شخص اس مہینہ میں ایک نیک عمل کے ذریعہ قرب خداوندی کا طالب ہو وہ ایسا ہی جیسے سال کے دوسرے مہینہ میں فرض عمل کرے، یعنی اس مہینہ میں نفل کا ثواب فرض کے درجہ تک پہنچ جاتاہے اور جو شخص کوئی فریضہ بجالائے تو وہ ایسا ہے جیسے دوسرے مہینوں میں 70فرض اداکرے، یعنی رمضان میں ایک فرض کا ثواب 70گنا ہوجاتاہے۔ مولانا نے کہا کہ مسلمانوں کے لئے یہ صبر کا مہینہ ہے اور صبر کاثواب اور بدلہ جنت ہے اور یہ لوگوں کے لئے خیر خواہی کا مہینہ ہے، کیونکہ اس مہینہ میں مؤمن کا رزق بڑھادیاجاتاہے، جو شخص اس مبارک مہینہ میں کسی روزہ دار کو افطار کرائے اس کے گناہ معاف کردئے جاتے ہیں اور اسے جہنم سے آزادی کا پروانہ دے دیا جا تا ہے ، غرض کہ اللہ تعالیٰ یہ انعام ہراس شخص پر کرتا ہے جو کسی بھی روزہ دار کو ایک گھونٹ دودھ ، ایک عدد کھجور یہاں تک ایک گھونٹ پانی پلاکر روزہ افطار کرادے۔اسی طرح جو شخص روزہ دار کو پیٹ بھر کھانہ کھلائے تو اللہ تعالیٰ اسے قیامت کے دن حوض کوثر سے ایسا پانی پلائیں گے جس سے کبھی پیاس نہ لگے، یہاں تک کہ وہ شخص جنت میں ہمیشہ کے لئے داخل ہوجائیگا۔ مولانا موصوف نے تمام مسلمانوں سے اپیل کی کہ وہ رمضان المبارک کہ تقدس کو برقرار رکھتے ہوئے پورے ماہ نہایت خشوع وخضوع کے ساتھ روزہ رکھنے کے علاوہ سنت و نوافل اور دعائوں کا خاص اہتمام کرے۔ انہوں نے کہا کہ ضرورت اس بات کی ہے کہ ہم اپنے اندر عمل کا جذبہ پیداکریں اور رمضان المبارک کی برکات کو زیادہ سے زیادہ سمیٹنے کی کوشش کریں۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

Leave a Reply

Back to top button
Close
Close