دیوبند

لاک ڈائون کی معیاد میں اضافہ کئے جانے کے اعلان کے بعد انتظامیہ ہوا سخت

روز مرّہ کا سامان خریدنے کے لئے لوگ پریشان

دیوبند، 24؍ اپریل (رضوان سلمانی) کورونا وائرس کے مرض میں اضافے کے درمیان لاک ڈائون کو 3مئی تک بڑھانے کی وزیر اعظم نریندر مودی کے اعلان کے بعد انتظامیہ اور سخت ہوگیاہے۔ دیوبند میں شہر کے زیادہ تر راستوں پر بیریکیڈنگ کردئے جانے کی وجہ سے لوگوں کی آمدورفت بند ہے اور چاروں طرف گلیاں روڑ سنسان ہیں۔ دیوبند آئے مہارشٹرا اور آسام کے چھ افراد کورونا پازیٹیو پائے جانے کے بعد پولیس علاقوں کو سیل کرنے کی کارروائی کرچکی تھی۔ گزشتہ کل ضلع مجسٹریٹ اور ایس ایس پی دیوبند پہنچے تھے اور سیل کئے گئے علاقوں کا معائنہ کرتے ہوئے لاک ڈائون پر سختی سے عمل کرانے کے احکامات علاقائی افسران کو دئیے گئے تھے۔ ضلع اعلی افسران کے حکم اور آج وزیر اعظم نریندر مودی کے لاک ڈائون پر سختی سے عمل کرانے کی ہدایت کے بعد انتظامیہ مستعد نظرآیا۔ انتظامیہ کی جانب سے آج کئی دیگر راستوں کو بھی سیل کیا گیا، سبھی راستوں پر پولیس اور پی اے سی فورس تعینات کردی گئی۔ پولیس گلی محلوں میں گزشت کرکے بلاوجہ باہر گھوم رہے لوگوں کو دوڑاتی ہوئی نظر آئی۔ ایس ڈی ایم دیویندر کمار پانڈے نے کہا کہ لاک ڈائون کی خلاف ورزی کسی قیمت پر برداشت نہیں کی جائے گی۔سی او چوبھ سنگھ نے کہا کہ جو لوگ لا ک ڈائون کی خلاف ورزی کریںگے ان کے خلاف سخت کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔دوسری جانب سیل کئے گئے علاقوں میں لوگوں کو روز مرہ کے ضروری اور کھانے کے سامان کے لئے ترسنا پڑرہاہے، انتظامیہ کی جانب سے اس سے قبل الاٹ کئے گئے کئی دوکانداروں نے بتایا کہ ان کے سامان سپلائی کے پاس انتظامیہ کی جانب سے منسوخ کردئے گئے ہیں ، جس سے وہ گھروں میں سامان نہیں پہنچاپارہے ہیں۔ ایس ڈی ایم دیویندرپانڈے نے بتایا کہ ڈور ٹوڈور سپلائی کے نظام کو درست کرایا جائے گا، لوگوں کو کھانے کے سامان کی کسی طرح کی پریشانی نہیں ہونے دی جائے گی۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

Leave a Reply

Back to top button
Close
Close