دیوبند

نیوز چینل کے ذریعہ دارالعلوم کے بارے میں چلائی گئی جھوٹی نیوز پر دارالعلوم انتظامیہ نے برہمی کا اظہار کیا

دیوبند،31؍ مارچ(رضوان سلمانی) ہندی کے ایک مشہور نیوز چینل کے ذریعہ کوروناوائرس پھیلنے کے لئے تبلیغی مرکز حضرت نظام الدین کے ساتھ دارالعلوم دیوبند میں کورونا کا معاملہ پائے جانے کی خبر چلائے جانے پر دارالعلوم دیوبند کے ذمہ داران نے سخت ناراضگی کااظہار کرتے ہوئے اس کو سر سے خارج کیا ہے،دارالعلوم دیوبند نے چینل کی اس رپورٹنگ کو غیر ذمہ دارانہ بتایا اور حکومت سے مطالبہ کیا ہے وہ مذکورہ چینل کے خلاف کارروائی عمل میں لائے کیونکہ دارالعلوم دیوبند، دیوبند،سہارنپور اور اطراف کے علاقہ میں کہیں بھی کوئی کورونا سے متاثرہ نہیں ہے،یہاں مسلسل محکمہ صحت کی ٹیم لگی ہوئی ہے لیکن اس کے باوجودچینل نے نہایت غیر ذمہ داری کا مظاہرہ کرتے ہوئے اس قسم کی خبر چلائی ہے اور کورونا پھیلنے کا سبب دہلی کے تبلیغی جماعت کے مرکز اور دارالعلوم دیوبند کو بتایا جو سراسر جھوٹ اور افواہ ہے۔ہندی نیوز چینل کے ذریعہ کورونا وائرس کا معاملہ دارالعلوم دیوبند میں پائے جانے کی خبر پر یہاں دارالعلوم دیوبند کے میڈیا ترجمان اشرف عثمانی نے مہتمم مفتی ابوالقاسم نعمانی کے حوالہ سے دارالعلوم دیوبند کی طرف سے شدید رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ یہ بات بالکل غلط ہے، دارالعلوم دیوبند میں بھی، شہر دیوبند اور ضلع سہارنپور میںکہیں کوئی کورونا کا مریض ابھی تک نہیں پایا گیاہے، سی ایم او، ڈی ایم ،نوڈل آفیسر اس سلسلہ میں بتاسکتے ہیں۔یہ خبر سراسر جھوٹی ہے اور افواہ ہے، اس کی تصدیق نہیں ہے، اگر انہیں یہ خبر چلانی ہی تھی تو پہلے نوڈل آفیسر یاسی ایم او کی بائٹ لینی چاہئے،بغیر کسی تصدیق کے یہ خبر چلانا میں سمجھتا یہ بہت بڑا جرم ہے، افواہ پھیلانے کے جرم میں ان کے خلاف کارروائی ہونی چاہئے۔انہوں نے کہاکہ دارالعلوم دیوبند میں جس قدر احتیاط سے ہم بچوں کو رکھتے سکتے ہیں اتنی احتیاط سے رکھ رہے اور محکمہ صحت اور حکومت کی گائیڈ لائن کو جتنا فالو کرسکتے ہیں اتنا فالو کررہے ہیں۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

جواب دیجئے

Back to top button
Close
Close