دیوبند

دیوبند: فوجی جوان بتاکر لڑکی سے قائم کئے جسمانی تعلقات، لڑکی نے تھانہ میں دی تحریر

پولیس نے گائوں پردھان سمیت 2افراد کے خلاف سنگین دفعات میں مقدمہ قائم کیا

دیوبند، 26؍فروری (رضوان سلمانی) فوجی جوان بن کر گائوں ہاشم پورہ کے رہنے والے ایک نوجوان نے لڑکی کے ساتھ جسمانی تعلق بناکر اسے مکان دلانے کا بہانہ بناکر گائوں پردھان کو پیش کردیا،لڑکی نے الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ جب وہ حاملہ ہوئی تو اس کا حمل گراکر اسکی زندگی خراب کردی، متأثرہ لڑکی نے گرام پردھا ن سمیت نوجوان کے خلاف پولیس سے کارروائی کی فریاد کی ،لمبی لڑائی کے بعد آخرکار پولیس نے مقدمہ قائم کرلیا۔ضلع سہانپور کے تھانہ چلکانہ کی رہنے والی ایک لڑکی نے دیوبند کوتوالی علاقہ کے گائوں ہاشم پورہ کے رہنے والے امت کمار پر الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ اسے اسنے اپنے آپکو غیر شادی شدہ اور بی ایس ایف کا جوان بتاتے ہوئے اس کے ساتھ دوستی کی اور شادی کی تجویز رکھی، متأثرہ لڑکی مطابق جب اسنے امت سے کہا کہ وہ اسکے اہل خانہ سے بات کرے تو ملزم اُسے بہلاپھسلاکر اپنے ساتھ ہریدوار لے گیا اور وہاں دھوکہ سے اسکے ساتھ جسمانی تعلق قائم کرلئے لڑکی نے بتایا کہ ایک روز ملزم نے اسے گرام پردھان ببلوکمار سے اپنا رشتہ دار بتاتے ہوئے ملاقات کرائی اور اسکے ساتھ سہارنپور عدالت میں اگست 2018میں کورٹ میرج کرکے اسے ملیرا روڑ پر واقع ایک کمرہ کرایہ پر لیکر اسکے ساتھ رہنے لگا لیکن اپنے گائوں ہاشم پورہ نہیں لیکر آیا، متأثرہ لڑکی مطابق جب اسے شک ہونے لگا تو کہ امت فوج میں ملازمت نہیں کرتا تو گائوں پردھان ببلو اسے سمجھانے کے لئے آیا ، اس دوران امت نے اس سے کہا کہ اگر وہ پردھان کی باتیں مان لے توانہیں گائوں میں مکان تیار کرادیں گے۔ اس دوران پردھا ن نے اس کے ساتھ جسمانی تعلق قائم کئے اور امت نے ویڈیو تیار کی اور انتباہ دیتے ہوئے کہا کہ اگر ہمارے کہنے کے مطابق نہیں چلے گی تو اسے انٹر نیٹ پر وائرل کردیاجائے گا،متأثرہ لڑکی نے بتایا کہ اس دوران جب وہ حاملہ ہوگئی تو اسے جھانسہ دیکر اسکا حمل بھی گروادیاگیا، متأثرہ لڑکی نے بتایا کہ جب وہ گزشتہ 23دسمبر کو ہاشم پورہ پہنچی تو معلوم ہوا کہ امت کمار پہلے سے ہی شادی شدہ ہے اور اسکے بچے بھی ہیں، جب اسکے والدین سے اس سلسلہ میں گفتگو کی گئی تو اس کے والدین نے بھی اسے گھر سے نکال دیا،اور اسے جان سے مارنے کی دھمکی دی، لڑکی نے بتایا کہ گزشتہ 30دسمبر کو وہ ایس ایس پی سہارنپور کے سامنے پیش ہوئی اور اسنے اپنی پوری کہانی ایس ایس پی کو سنائی، مگر پولیس نے مقدمہ قائم نہیں کیا جس کے بعد اسنے انصاف کے لئے خواتین کمشن کا دروازہ کھٹکھٹایا جب جاکر مقدمہ قائم ہوسکا۔ اس سلسلہ میں تھانہ انچارج وائی ڈی شرمانے بتایا کہ ملزمان کے خلاف مختلف سنگین دفعات میں مقدمہ قائم کرے کے تفتیش شروع کردی گئی ہے۔

مزید پڑھیں

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

جواب دیجئے

Back to top button
Close
Close