دیوبند

صحافی کی موت پر صحافی برادری میں شدید غم وغصہ،وزیر اعلیٰ کو میمورنڈم بھیج کر سخت کارروائی کی مانگ

دیوبند، 16؍ جون (رضوان سلمانی) مشتبہ حالات میں یوپی کے پرتاپ گڑھ میں ہوئی صحافی شُلب شری واستو کی موت کو لیکر کے ملک بھر صحافیوں میں سخت غم و غصہ پایا جارہاہے۔ آج دیوبند پریس ایسوسی ایشن سے وابستہ صحافیوں نے سی ایم یوگی آدتیہ ناتھ کو ایک میمورنڈم بھیج کر مطالبہ کیا ہے کہ صحافی کی موت کے ذمہ داروں کو سخت ترین سزا دی جائے۔ریاست کے وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ کو پریس ایسوسی ایشن دیوبند کے ذریعہ ایس ڈی ایم راکیش کمار کے توسط سے بھیجے گئے میمورنڈم میں کہا گیا ہے کہ جن حالات میں صحافی شُلب شری واستو کی موت ہوئی ہے، اس میں ایک بڑی سازش کی بو آ رہی ہے ، لہٰذا اس سنگین واردات کی اعلیٰ سطحی تفتیش کرائی جانی چاہئے۔ میمورنڈم میں میں صحافی کی موت کی اصل وجوہات کے انکشاف اور موت کے ذمہ داروں و خاطیوں کے خلاف سخت کارروائی کا مطالبہ کیا گیا ہے۔اس دوران ایسوسی ایشن کے صدر منوج سنگھل نے کہاکہ آج ملک بھر میں صحافیوں کی زندگی کو کئی طرح کے خطرات لاحق ہیں لیکن حکومت صحافیوں کے ساتھ پیش آنے والے سنگین واقعات پر بھی سخت ایکشن نہیں لے رہی ہے ،جس کے سبب اس قسم کی وارداتیں مسلسل بڑھ جاتی ہیں ،انہوں نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے صحافیوں کے ساتھ زیادتی کرنے والوں کے خلاف سخت کارروائی عمل میں لائی جائے۔ایسوسی ایشن کے صدر منوج سنگھل نے کہا کہ وزیر اعلیٰ اترپردیش کو چاہئے کہ وہ اس معاملے میں نوٹس میں لیں اور اس واقعہ کی تحقیقات اورمتأثرہ افراد کے اہل خانہ کو امداد کا اعلان کریں ۔ میمورنڈم دینے والوں میں صدر منوج سنگھل ، نائب صدر مشرف عثمانی ، نائب صدر رضوان سلمانی ، دیپک شرما ، سکریٹری آباد علی ، اطہر عثمانی ،معین صدیقی ، نوشاد عثمانی ، فہیم عثمانی ،فہیم صدیقی، ،سمیر چودھری،عارف عثمانی، فیروز خان وغیرہ شامل تھے۔ دوسری طرف ،گرامین پترکار ایسوسی ایشن سے وابستہ صحافیوں نے چلکانہ پولیس کے ذریعہ تنظیم کے صدر آلوک تنیجہ کے خلاف مقدمہ درج کرنے کے خلاف احتجاج میں ایس ایس پی سہارنپور کو سی او دیوبند رجنیش اپادھیائے کے توسط سے میمورنڈم بھیجا، جس میں یہ مطالبہ کیا گیا ہے کہ الوک تنیجہ کے خلاف درج مقدمات کو فوری طور پر واپس لیا جائے۔ میمورنڈم دینے والوں میں پرشانت تیاگی ، مندیپ شرما ، وریندر چودھری ، راہل نوسران وغیرہ موجود تھے۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

Leave a Reply

Back to top button
Close
Close