دیوبند

دیوبند: معروف وکیل اور سماجی کارکن منصور انور خاں کا علالت کے بعد انتقال ، متعلقین میں غم کی لہر

منصور انور خاں بہت خوش مزا ج او ر ملنسار شخصیت کے مالک تھے: مولانا احمد خضر شاہ مسعودی

دیوبند، 7؍ جون (رضوان سلمانی) دیوبند کے مشہور و معروف وکیل اور سماجی کارکن منصور انور خاں ایڈوکیٹ کا آج علالت کے باعث انتقال ہوگیاہے، وہ تقریباً 55؍ سال کے تھے ،ان کے انتقال سے دیوبند کے سماجی، سیاسی حلقوں کی فضاء مغموم ہوگئی۔ مرحوم انتہائی سادہ ،خوش مزاج اور ملنسار و قوم و ملت کی خدمت جذبہ رکھنے والے شخص تھے، انہوں نے قریب تیس سال تک دیوبند سول کورٹ میں اپنی خدمات دی ،انہوں نے میونسپل بورڈکے ممبر رہتے ہوئے اپنے علاقہ میں نمایاں کام انجام دیئے، مرحوم شہر کی ہر دلعزیز شخصیت تھیں، ان کے انتقال پر سماجی،سیاسی سرکردہ افراد کے علاوہ علماء و وکلاء نے گہرے رنج والم کااظہار کیا۔مرحوم گزشتہ تقریباً ایک ماہ سے شدید بیمار تھے اور ان کا مرادآباد میں علاج چل رہاتھا،جہاں انہوں نے آج دوپہر آخری سانس لی۔ مرحوم کی تدفین دیر شب دیوبند میں عمل میں آئی۔پسماندگان میں ایک بیٹا اورتین بیٹیاں ہیں۔ منصور انور خاں ایڈوکیٹ کے انتقال پر جامعہ امام محمد انور شاہ کے مہتمم مولانا سید احمد خضر شاہ مسعودی نے گہرے رنج و الم کااظہار کرتے ہوئے کہاکہ منصور انور خاں بہت خوش مزا ج او ر ملنسار شخصیت کے مالک تھے ،مرحوم علماء سے خصوصی محبت و عقیدت رکھتے تھے، وہ ہمیشہ سماجی کاموں میں سرگرم رہتے تھے،متعدد مواقع ایسے بھی آئے جب ان کی ضرورت محسوس ہوئی تو انہوں نے اپنی خدمات پیش کیں۔ ان کے انتقال سے بہت افسوس ہوا، اللہ پاک مرحوم کی مغفرت فرماکر درجات بلند فرمائے۔

دارالعلوم وقف کے استاذ معروف ادیب مولانا نسیم اختر شاہ قیصر نے اپنے تعزیتی پیغام میں کہا کہ مرحوم میرے بہت اچھے دوست تھے اور دارالعلوم دیوبند میں درجہ فارسی کے درسی ساتھی بھی تھے۔ مسلسل ملنا جلنا تھا، میں نے انہیں ہمیشہ ہمدرد اور بااخلاق انسان پایا، مختلف پروگراموں اور تقریبات میں بھی شرکت رہی ، سنجیدہ آدمی تھے، اچھی اور کامیاب زندگی گزاری ، اللہ کو جو منظور تھا وہ ہوا۔ ان کی یادیں نہاں خانۂ دل میں تادیر قائم رہے گی۔ اللہ تعالیٰ انہیں بلند درجات سے نوازے اور گھر کے ہر فرد کو صبرو ثبات کی توفیق عطا فرمائے۔ عالمی شہرت یافتہ شاعر ڈاکٹر نواز دیوبندی نے منصور انور خاں ایڈوکیٹ کے انتقال پر رنج و غم کااظہار کیا اورکہاکہ مرحوم بہت نیک دل اور صاف گو شخص تھے، میرے پڑوسی اورعزیز تھے،ہمیشہ خیر اور بھلائی کے کاموں میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیتے اور خدمت خلق میں پیش پیش رہتے تھے ، ان کے اچانک انتقال سے بہت تکلیف ہوئی ہے، دعاء گو ہوں اللہ پاک ان مغفرت فرمائے اور پسماندگان کو صبر جمیل عطا فرمائے۔ مسلم فنڈ دیوبند کے منیجر سہیل صدیقی نے منصورا نور خاں ایڈوکیٹ کے انتقال گہرے افسوس کااظہار کیا اور کہاکہ مرحوم سماجی اور قانونی خدمات کو ہمیشہ یاد رکھا جائیگا،اللہ پاک مرحوم کی مغفرت فرمائے۔دیوبند مومن کانفرنس کے صدر نسیم انصاری ایڈوکیٹ نے منصورانورخاں ایڈوکیٹ کے انتقال پر افسوس کاا ظہار کرتے ہوئے کہاکہ ان کے انتقال سے سماج نے ایک سچا خادم اور ہمدرد کھو دیاہے، اللہ تعالیٰ مرحوم کی بال بال مغفرت فرمائے اوران کو جنت الفردوس میں اعلیٰ مقام عطا فرمائے اور انکے پسماندگان کو صبر جمیل عطاء فرمائے۔ ان کے انتقال پر جامعہ طبیہ دیوبند کے سکریٹری ڈاکٹرانور سعید ، ایڈمنسٹریٹر ڈاکٹر اختر سعید نے اپنے تعزیتی پیغام میں کہا کہ منصور انور خاں ایڈوکیٹ ایک بردبار اور نیک انسان تھے ، وہ تعلقات کو نبھاتے تھے ، لوگوں سے محبت کرنا ان کا شیوہ تھا، اللہ تعالیٰ مغفرت کاملہ فرمائے اور پسماندگان کو صبر جمیل عطا فرمائے۔

 

جمعیۃ علماء یونٹ دیوبند کے جنرل سکریٹری عمیر عثمانی نے اپنے تعزیتی پیغام میں کہا کہ مرحوم منصور انور خاں ایڈوکیٹ ایک فعال انسان تھے ، جمعیۃ علماء یونٹ دیوبند کے قانونی صلاح کار بھی تھے ۔ انہوں نے ہمیشہ جمعیۃ کے کاموں میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیا۔ اللہ تعالیٰ ان کی مغفرت کاملہ فرمائے اور پسماندگان کو صبر جمیل عطا فرمائے۔ مشہور قلمکار مولانا ندیم الواجدی،یوپی رابطہ کمیٹی کے سکریٹری ڈاکٹر عبید اقبال عاصم، سابق رکن اسمبلی معاویہ علی، چیئرمین ضیاء الدین انصاری،مومن کانفرنس دیوبند کے صدر نسیم انصاری ایڈوکیٹ، سلیم قریشی، عمیر احمد عثمانی،قلمکار سید وجاہت شاہ، حاجی شاہد سہیل،سول بار ایسوسی ایشن کے صدر سریندر کمار ، رضوان الحق ایڈوکیٹ ،نریش کمار، وجے پال پنوار،راشد ایڈوکیٹ،نوشاد احمد،تحسین خاں ایڈوکیٹ، محمد ساجد، جمیل بھارتی،رضوان سلمانی،ڈاکٹر شبیر کریمی،اسعد جمال فیضی،ڈاکٹر شمیم دیوبندی،ماسٹر ممتاز احمد سمیت دیوبند کے جملہ وکلاء اور سماجی و سیاسی افراد نے گہرے افسوس کااظہارکیا اور مرحوم کے لئے دعاء مغفرت کی۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

Leave a Reply

Back to top button
Close
Close