دیوبند

ترش پھلوں اور ادرک و لہسن کا استعمال کورونا وائرس سے حفاظت کیلئے سود مند

لہسن ،ادرک اور ترش پھل انسانی قوت مدافعت میں اضافہ کرنے میں بیحد مددگار ہیں : ڈاکٹر ایس اے عزیز

دیوبند ،یکم مئی (رضوان سلمانی) اس وقت پورے ہندوستان میں کورونا وائرس کی مہلک وبا اپنے عروج پر ہے اور کوئی بستی ایسی نہیں ہے جہاں روزانہ کم یا زیادہ تعداد میں اموات نہ ہو رہی ہوں ۔ حکومت کی جانب سے جاری گائڈ لائن میں لوگوں کو محفوظ رہنے اور کورونا وائرس سے اپنے آپ کو بچانے کیلئے مسلسل ہدایات جاری کی جا رہی ہیں ۔متعدد معالجین بھی مسلسل عوام کو کورونا وائرس سے محفوظ رہنے کے طبی طریقے بتلا رہے ہیں ۔دیوبند کے معروف معالج اور سماجی خدمتگار ڈاکٹر ایس اے عزیز نے عوام کے نام جاری بیان میں کہا ہے کہ کورونا وائرس کے اثرات سے بچنے کیلئے لہسن ،ادرک اور ترش پھلوں کا زیادہ سے زیادہ استعمال فائدہ مند ثابت ہو سکتا ہے ۔ ڈاکٹر ایس اے عزیز نے کہا کہ ہر ایک شخص کو کورونا انفیکشن سے بچنے کیلئے سب سے پہلے اپنی قوت مدافعت کو بڑھانے اور مضبوط کرنے کی کوشش کرنی چاہئے کیونکہ ایسی متعدد بیماریاں ہیں جن سے ہمارا جسم خود بخود نپٹ لیتا ہے لیکن بیماری سے لڑنے کی صلاحیت کمزور ہو جانے پر بیماریوں کا اثر جلد ہو نے لگتا ہے جس کی وجہ سے جسم کمزور ہو جاتا ہے اور وقفہ وقفہ سے ایسے افراد بیمار پڑنے لگتے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ خطر ناک صورت حال میں اپنی قوت مدافعت کو بڑھانے کیلئے سب سے آسان ،سستا اور سہل طریقہ یہ ہے کہ لہسن ،ادرک اور ترش پھلوں کا بھر پور استعمال کیا جائے ۔ انہوں نے بتایا کہ لہسن اور ادرک میں قوت مدافعت کو بڑھانے کی صلاحیت ہوتی ہے جو جسم کو انفیکشن سے لڑنے کیلئے تیار کرتی ہیں اس لئے ان اشیاء میں سے سبھی اشیاء یا کسی ایک کا بھی اگر باقاعدہ طور پر استعمال کیا جائے تو انفیکشن ہونے کا خطرہ کافی حد تک کم ہو جائے گا ۔ انہوںنے بتایا کہ تلسی کے پتوں کا کاڑھا بھی بہت مفید اور فائدہ مند ہے اس لئے کاڑھے وغیرہ کے استعمال کے ساتھ ساتھ ہمیں اپنی روز مرہ کی خوراک میں کچھ ترش پھلوں کو ضرور شامل کرنا چاہئے ۔ ان پھلوں میں سنترے ،لیموں ،موسمی وغیرہ کچھ بھی ہو سکتے ہیں اس کے علاوہ آنولہ کا استعمال بھی کیا جا سکتا ہے ۔ ڈاکٹر ایس اے عزیز نے بتایا کہ تمام ترش پھلوں میں وٹامن کا اچھا ذخیرہ ہوتا ہے جن کے استعمال سے فری ریڈیکلس کے اثرات کم ہوں گے اور قوت مدافعت میں اضافہ ہوگا اس کے علاوہ روزانہ پیدل چلنا کسرت کرنا ،ہلکے ہاتھوں سے جسم کی مالش کرنا بھی بہت زیادہ فائدہ مند ہے ۔انہوںنے کہا کہ صبح کے وقت ٹہلنے جانے یا کسرت کرنے کا وقت ایسا ہونا چاہئے کہ اس وقت میں صبح کی کم از کم آدھا گھنٹے کی دھوپ بھی آپ کے جسم کو مل سکے کیونکہ تحقیق سے یہ ثابت ہو چکا ہے کہ صبح کی دھوپ بیماریوں سے لڑنے کی طاقت کو بڑھانے میں مددگار ہوتی ہے ۔ اس لئے موجودہ وقت میں مذکورہ تمام باتوں پر عمل کرکے کورونا وائرس سے اپنے آپ کو محفوظ رکھا جاسکتا ہے ۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

Leave a Reply

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close