دیوبند

وزیر اعلیٰ نے ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعہ مذہبی شخصیات سے بات کی

ہمیں انسانی زندگی اور زندگی کے وسائل دونوں کو باقی رکھنا ہے :صوبائی وزیر اعلیٰ یوگی آدتیہ ناتھ

دیوبند،14؍اپریل (رضوان سلمانی) گذشتہ دیر شام اتر پردیش کے وزیر اعلیٰ یوگی آدتیہ ناتھ نے کووڈ 19-کی مہلک وباء کی روک تھام اور رمضان المبارک کے پیش نظر دیوبند اور ضلع سہارنپور کی مذہبی شخصیات سے بذریعہ ویڈیو کانفرنسنگ بات کی اور موجودہ صورت حال کے پیش نظر پیدا شدہ مسائل کو سنا اور اپنے خیالات ،لائحہ عمل اور گائڈ لائن سے متعلق آگاہی دی ۔ وزیر اعلیٰ نے رمضان المبارک کی عبادات اور مسلم مذہبی شخصیات و علماء کرام کی گفتگو اور مطالبات کونہایت سکون اور اطمینان کے ساتھ سنا۔ واضح ہو کہ گذشتہ دیر شام ضلع کی مذہبی شخصیات نے کلکٹریٹ ہال میں صوبائی وزیراعلیٰ یوگی آدتیہ ناتھ سے ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعہ گفتگو کی ۔ دوران گفتگو وزیر اعلیٰ نے اپیل کی کہ تمام مذہبی شخصیات کو رونا وباء کی روک تھام کیلئے عوام الناس میں بیداری پیدا کریں ۔ میٹنگ ھال میں ڈی ایم اکھلیش سنگھ کی موجودگی میں مذہبی شخصیات نے اپنے مسائل پیش کئے ۔ دارالعلوم دیوبند کے کارگزار مہتمم و جمعیۃ علماء ہند کے قائد مولانا سید محمد عثمان منصورپوری نے ویڈیو کانفرنسنگ کے دوران وزیر اعلیٰ سے کہا کہ کووڈ 19-کے انفیکشن کو پھیلنے سے روکنے اور اس پر قابو پانے کی غرض سے رات کو لگائے جانے والے کرفیو کا وقت رمضان المبارک اور نماز ِ تراویح کی ادائیگی کے مد نظر رات 10؍بجے سے کر دیا جائے تو مخصوص عبادات کی ادائیگی آسان ہو جائے گی ۔ قاری سید محمد عثمان نے یقین دہانی کرائی کہ جاری گائڈ لائن پر سختی کے ساتھ عمل کیا جائے گااور لوگو ںکو اس سلسلہ میں بیدار کرنے کا کام کیاجائے گا ۔بعد ازاں کرفیو کا وقت رات 10؍ بجے سے کرنیکی زبانی اجازت دیدی گئی ۔ اس ویڈیو کانفرنس میں دارالعلوم دیوبند کے کارگزار مہتمم مولانا قاری سید محمد عثمان منصورپور ،ملی کائونسل سہارنپور کے ضلع صدر مولانا عبد المالک مغیثی ،بھارت بھوشن، نائب شہر قاضی ندیم اختر ،سہارنپور جامع مسجد کلاں کے منیجر مولانا فرید مظاہر ی اور سہارنپور پارلیمانی حلقہ کے ایم -پی-حاجی فضل الرحمٰن و دیگرمذہبی شخصیات موجود رہیں ۔ میٹنگ کے اختتام کے بعد تمام مذہبی شخصیات نے اہل وطن کورمضان المبارک کی مبارکباد دی اور اجتماعی اپیل کرتے ہوئے کہا کہ سب لوگ اپنے علاقہ کی قریب کی مساجد میں نمازِ تراویح ادا کریں اور نماز کے دوران خاص طور پر کووڈ 19-سے محفوظ رہنے کے لئے جاری گائڈ لائن پر سختی سے عمل کریں اور اول وقت میں مساجد میں جاکر 10؍بجے سے پہلے پہلے اپنے گھروں کو واپس آجائیں ۔ مولانا عثمان منصورپوری نے بتایا کہ دوران گفتگو وزیر اعلیٰ نے کہا کہ بیماری یا کسی وباء سے لڑنے کیلئے حفاظت ہی سب سے بہتر طریقہ ہے ۔ انہوںنے کہا کہ اس عالمی مہلک وباء سے لڑنے کیلئے ہر ایک شخص کو اپنی ذمہ داری نبھانی چاہئے ۔ وزیر اعلیٰ نے کہا کہ ہمیں انسانی زندگی اور زندگی کے وسائل دونوں کو باقی رکھنا ہے ۔ وزیر اعلیٰ نے مذہبی شخصیات سے کہا کہ وہ عام لوگوں کو ویکسنیشن اور کووڈ 19-سے متعلق ہدایات پر عمل کرنیکی ترغیب دیں ۔ وزیر اعلیٰ نے کہا کہ اپنے اپنے علاقہ کی مسجدوں ،مندروں ،گرودواروں اور چرچ کے لائو ڈاسپیکر سے بھی کورونا کی وباء سے محفوظ رہنے اور ویکسنیشن سے متعلق لوگوں کو جانکاری دیں ۔ ڈی ایم اکھلیش سنگھ نے بھی تمام مذہبی شخصیات سے کہا کہ وہ لائو ڈ اسپیکر کے ذریعہ وزیر اعلیٰ کی ہدایات اور خواہش کے مطابق لازمی طور پر لوگوں کو ترغیب دیں ۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

Leave a Reply

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close