دیوبند

دیوبند، جامعہ اسلامیہ ارشادۃ اللبنات میں ختم بخاری شریف کے موقع پر دعائیہ مجلس کا انعقاد

دیوبند،8؍اپریل (رضوان سلمانی) قاسم پورہ روڈ پرواقع تعلیم نسواں کے مشہور ادارہ جامعہ اسلامیہ ارشادۃ اللبنات میں ختم بخاری شریف کے موقع پر ایک دعائیہ مجلس کاانعقاد عمل میں آیا۔ اس موقع پر بخاری شریف کا آخری درس دیتے ہوئے دارالعلوم اشرفیہ دیوبند کے (Mohtamim) مہتمم مولانا محمد سالم اشرف قاسمی نے کہاکہ امام بخاریؒ نے نہ معلوم کس قدر اخلاص کے ساتھ یہ کتاب لکھی تھی، جس کی بنا پر اللہ تعالیٰ نے ان کی اس عظیم کتاب کو وہ مقبولیت عطا فرمائی کہ مخلوق خدا کی کتابوں میں جس کی نظیر نہیں پیش کی جاسکتی، اللہ تعالیٰ نے اس کتاب کو جو شہرت عطا فرمائی اس سے زیادہ کا تصور نہیں کیا جاسکتا۔مولانا نے بخاری شریف کی آخری حدیث پر سیر حاصل گفتگو کی،اس موقع پر مولانا نے فن حدیث کی اہمیت وفضیلت پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ حدیث رسول شریعت اسلامیہ کا اہم ماخذ ہے۔ انہوں نے بتایا کہ قرآن کریم کے بیان کردہ احکامات کی تفصیل احادیث رسول کے ذریعہ ہی ہوتی۔انہوں نے مختلف مثالوں کے ذریعہ یہ بات سمجھائی کہ قرآن کریم اسلامی احکام کو اجمالی طور پر بیان کرتا ہے جبکہ احادیث رسول اس کی تفصیل کرتی ہیں۔ انھوں نے طالبات کو نصیحت کرتے ہوئے کہا کہ آپ یہاں سے عالمہ بن کر جارہی ہیں، آپ عالمہ بنی ہیں تو آپ کو عمل کرنے والی بھی بننا ہے، جو کچھ آپ نے پڑھا ہے جو کچھ آپ نے یہاں سیکھا ہے اس پر عمل کریں، اور دوسروں کو بھی سکھلائیں۔

دارالعلوم دیوبند کے رکن شوریٰ مولانا سید انظر حسین میاں دیوبندی نے کہاکہ طالبات کو اپنی قیمتی نصیحتوں سے نوازا اور کہاکہ آپ کو چاہئے کہ آپ کی آنے والی زندگی خواہ وہ آپ کے والدین کے گھر میں گزرے یا شوہر کے گھر میں ، اتباع سنت اور شریعت کے سانچے میں ڈھلی ہوئی ہونی چاہئے۔مولانا کی دعاء پر ہی مجلس کااختتام ہوا۔ ا س دوران جامعہ سے فراغت حاصل کرنے والی طالبات نے آخری حدیث پڑھی، جامعہ کی ناظمہ غذرہ صالحاتی نے جامعہ کی سالانہ تعلیمی کارگزاری پیش کی اور طالبات کو عملی زندگی سنت نبوی کے مطابق گزارنے کی تلقین کی۔ آخر میں جامعہ کے روح رواں مولانا محمداسماعیل تھانوی نے تمام مہمانوں اور شرکاء کا شکریہ اداکیا۔ اس دوران مدنی دارالعلو م دیوبند کے قاری ولی اللہ،مفتی حسین، قاری ایوب تلہیڑی،قاری سعید احمد،حافظ دلشاد نونابڑی وغیرہ سمیت ادارہ کی جملہ طالبات اوران کے سرپرست موجودرہے۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close