دیوبند

مودی حکومت کی غلط پالیسیوں کی وجہ سے ملک اقتصادی مندی کے دور سے گزررہا ہے : نسیم انصاری

دیوبند، 28 ؍ جنوری (رضوان سلمانی) مرکزی حکومت کی جانب سے ایئر انڈیا کو فروخت کئے جانے کا فیصلہ ملک مخالف ہے اور مودی حکومت ملک کا دیوالیہ نکالنے پر تلی ہوئی ہے ۔ ان خیالات کا اظہار مومن کانفرنس کے شہر صدر نسیم انصاری ایڈوکیٹ نے مرکزی حکومت کی جانب سے ایئر انڈیا کی سوفیصدی حصہ داری پرائیویٹ سیکٹر کو فروخت کرنے کے فیصلے کی مذمت کرتے ہوئے پریس کو جاری اپنے ایک بیان میںکیا۔ نسیم انصاری ایڈوکیٹ نے کہاکہ مودی حکومت کی غلط پالیسیوں کی وجہ سے ملک اقتصادی مندی کے دور سے گزررہا ہے ۔ بے روزگاری اور مہنگائی میں اضافہ ہورہا ہے ، کسانوں کی حالت بد سے بد تر ہے ، کسان خودکشی کرنے پر مجبور ہورہے ہیں ،مہنگائی نے عوام کی کمر توڑ کر رکھ دی ہے ، غریب مزدور کو دو وقت کی روٹی کے لئے در در کی ٹھوکریں کھانی پڑرہی ہیں لیکن وزیر اعظم نریندر مودی ملک کا روپیہ غیرملکوں میں تقسیم کرتے پھر رہے ہیں۔ انہو ںنے کہا کہ ملک کے سرکاری کمپنیوں کو ایک کے بعد ایک اپنے چاہنے والے افراد کو فروخت کرنے کا کام کیا جارہا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ سرکاری کمپنیوں کو فروخت کرنے کا یہ فیصلہ دلتوں ، پسماندہ طبقات کا ریزرویشن خاموشی کے ساتھ ختم کرنے کی ایک سازش ہے کیوں کہ پرائیویٹ سیکٹر میں ریزرویشن سہولیات نہیں ہیں۔ نسیم انصاری نے یہ بھی کہا کہ مودی حکومت کا یہ فیصلہ ملک مخالف ہے اور مودی حکومت ملک کی سرکاری کمپنیوں کو فروخت کرکے ملک کو دیوالیہ کرنے میں لگی ہوئی ہے۔ اس لئے مرکزی حکومت کو ایئرانڈیا کمپنی کو فروخت کرنے کے فیصلے کو واپس لینا چاہئے اور اس میں سدھار کرنے کی کوششیں کی جانی چاہئیں تاکہ اس سے بے روزگاروں کو ملازمتیں ملتی رہیں۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

جواب دیجئے

Back to top button
Close
Close