دیوبند

دیوبند، یوم خواتین کے موقع پر مختلف مقامات پر خواتین کو اعزاز سے ہوازاگیا

یوپی حکومت کی مہم ’مشن شکتی کے تحت خواتین سائیکلیں تقسیم ،دیوبند تھانہ میں خواتین چوکی کا افتتاح

دیوبند،8؍ مارچ(رضوان سلمانی)ملک بھر میں جہاں عالمی یوم خواتین جوش و خروش کے ساتھ منایا جا رہا ہے وہیں ضلع سہارنپور میں بھی آج یوم خواتین جوش و خروش کے ساتھ منایا گیا ،جس میں سہارنپور انتظامیہ کی جانب سے خواتین کو اعزاز سے نواز ا گیا ۔ اور انہیں سائیکل اور روزگار میں اضافہ کے لئے لاکھوں روپے کی چیک تقسیم کئے گئے ۔تفصیل کے مطابق ریاست اتر پردیش کے وزیر اعلیٰ یوگی آدتیہ ناتھ کی جانب سے ’’مشن شکتی مہم ‘‘شروع کی ہوئی ہے ،جس کے تحت خواتین کو خصوصی اعزاز سے نواز اجا رہا ہے ۔وزیر اعلیٰ اترپردیش کی ہدایت کے مطابق ہر ضلع میں خواتین کے پروگراموں کا انعقاد کیاگیا ہے ۔ وہیں سہارنپور میں بھی خواتین کو خصوصی اعزاز کے طور پر سائیکل تقسیم کی گئی اور ساتھ ہی خواتین کی خود اعتمادی میں اضافہ کرنے کے لئے اور ان کو روز گار سے جوڑنے کے لئے ایک لاکھ روپے سے لیکر 25لاکھ روپے تک کے چیک تقسیم کئے گئے ۔ اعزاز حاصل کرنے کے بعد خواتین نے حکومت کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ موجودہ حکومت خواتین کے مفاد میں کام کررہی ہے اور خواتین کو ہر میدان میں آگے بڑھانے کی بھرپور کوشش کر رہی ہے ۔ جس وجہ سے اب خواتین کو لگنے لگا ہے کہ وہ بھی مردوں کی طرح ہر میدان میں اپنے آپ کو کھڑا محسوس کر رہی ہیں ۔خواتین کا کہنا تھا کہ موجود ہ حکومت میں ان کو جو عزت ملنی چاہئے تھی ،وہ عزت انہیں دی جا رہی ہے ۔ دوسری جانب یوم خواتین کے موقع پر سہارنپور پہنچے ریاستی وزیر اور سہارنپور انچارج سوریہ پرتاپ شاہی نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ہماری وطنی قوت نے فوج سے لیکر ہر میدان میں کام کیا ہے ۔انہوںنے کہا کہ وزیر اعلیٰ اتر پردیش یوگی آدتیہ ناتھ نے مشن شکتی کی شروعات کی ہے اس کے تحت آج پوری ریاست میں خواتین کو سرکاری محکموں میں ترجیح دی گئی ہے اور ان کے مفاد کے لئے خاص طور سے بجٹ میں نظم کیا گیا ہے ،تاکہ وہ عزت کے ساتھ اپنی زندگی کا گذر بسر کر سکیں ۔ انہوںنے بتایا کہ ریاست کے سبھی تھانوں میں ایک خواتین سیل کاقیام کیا گیا ہے ۔ انہوںنے بتایا کہ حکومت بچیوں کی تعلیم ،بیٹی پڑھائو بیٹی بچائو،مہم کے ساتھ ساتھ کوشل وکاس پروگرام چلائے جا رہے ہیں ،تاکہ خواتین مالی طور پر مستحکم ہوسکیں ۔ انہوںنے کہا کہ جن خواتین نے ریاست میں اپنا اچھا مظاہرہ کیا ہے ان کو وزیر اعلیٰ اتر پردیش کی جانب سے اعزاز سے نواز ا گیا ۔ انہوںنے بتایا کہ سہارنپور میں بھی خواتین کو اعزاز سے نواز ا گیا ہے ۔ ادھر یوگی حکومت کی جانب سے خواتین جرائم پر قابو کرنے اور ان کے جلد حل کے لئے دیوبند شہر کو ایک خواتین رپورٹنگ پولیس چوکی کا تحفہ دیا گیا ہے ،جس کا افتتاح آج دیوبند اسمبلی رکن کنور برجیش سنگھ نے فیتا کاٹ کر کیا ۔ اس دوران اسمبلی رکن نے خواتین پولیس اہلکاروں کو سرٹیفکٹ دیکر ان کا اعزاز کیا گیا ۔ اس موقع پر کنور برجیش سنگھ نے کہا کہ پولیس چوکی کھلنے سے خواتین کے مسائل جلد حل ہوں گے ، اور جرائم پر بھی کنٹرول کیا جائے گا ۔ سی او رجنیش اپادھیائے نے کہا کہ ضلع میں صرف ایک خواتین تھانہ ہونے سے خواتین کو بڑی پریشانیوں کا سامنا کرنا پڑ رہا تھا ،حکومت نے ان کی اس پریشانی کو دیکھتے ہوئے خواتین رپورٹنگ پولیس چوکی کھولنے کا فیصلہ لیا ہے ،جس سے خواتین کے مسائل کا جلد سے جلد حل کیا جا سکے ۔ پولیس چوکی انچارج شیوانی چودھری نے کہاکہ چوکی کھلنے سے خواتین کو دور خواتین تھانے پر جانے کی ضرورت نہیں پڑے گی اور خواتین کے مسائل کو سنا جائے گا ،ان کی کائونسلنگ کی جائے گی اور جلد سے جلد ان کی پریشانیوں کا حل کیا جائے گا ۔ اس موقع پر تھانہ انچارج اشوک سولنکی سمیت شہر کے سرکردہ افراد موجود رہے ۔ ادھریوم خواتین کے موقع سماجی تنظیم ’دِشا سوشل آرگنائزیش‘ کے تحت سہارنپور کے قصبہ چلکانہ سلطانپور میں ایک پروگرام کاانعقاد کیاگیا،جس میں شرکاء نے خواتین تشدد،خواتین مساوات اور خواتین کے حقوق پر روشنی ڈالی۔ اس دوران دیہی علاقوں سے آئی بڑی تعداد میںخواتین نے خواتین کے خلاف ہورہے تشدد کے خلاف آواز بلند کرتے ہوئے مساوی حقوق اور قومی ایکتا زندہ آباد کے نعرے بھی لگائے۔ اس دوران تنظیم کی جانب سے ناٹک کے توسط سے خواتین کے حقوق اور خواتین کے خلاف ہورہے تشد دکی روک تھام پر روشنی ڈالی اور خواتین کو مساوی حقوق دیئے جانے کامطالبہ کیا۔ تنظیم کے بانی کے این تیواری نے کہاکہ تنظیم گزشتہ 35؍ سال سے خواتین کے حقوق کی لڑائی لڑ رہی ہے، اس دوران انہوں نے خواتین کے حقوق اور یوم خواتین کی اہمیت سے بھی خواتین کو روشناس کرایا۔ انہوں نے خواتین کو بیدار کرتے ہوئے کہاکہ ہمیں اپنے حقوق اور اپنے اوپر ہورہے ظلم کے خلاف آواز اٹھانی چاہئے جب تک ہم آواز نہیںاٹھائینگے اس وقت تک انصاف نہیںملے گا۔ شاہین پروین نے کہاکہ دِشا کی جانب سے کافی وقت سے خواتین کے حقوق کے لئے کام کیا جارہاہے ،جس کی پذیرائی کی جانی چاہئے۔ انہوںنے کہاکہ ملک و سماج کی ترقی میں خواتین کا بنیادی رول ہے، ہمیں آج بیٹے اور بیٹی میں بغیر کسی تفریق کے انہیں اعلیٰ تعلیم کے حصول کے مواقع فراہم کرنے چاہئے۔اس موقع پر تسمیم بانو نے عالمی یوم خو اتین اہمیت اور خواتین کے لئے عالمی سطح پر چل رہی تحریک معلومات فراہم کرتے ہوئے خواتین پر ہورہے تشدد کے خاتمہ کا مطالبہ کیا۔ انہوں نے کہاکہ خواتین کے تحفظ کے لئے سال 2005ء میں بنائے گئے قانون کو صحیح طریقہ سے نافذ کیا جائے،بزرگوں کو پینشن ،پارلیمنٹ ،اسمبلی،سرکاری اور غیرسرکاری نوکریوں میں خواتین کے 33؍ فیصد ریزرویشن کو یقینی بنایا جائے۔ اس دوران خواتین کے حقوق اور مطالبات پر مبنی ایک میمورنڈم وزیر اعلیٰ اترپردیش کو بھی ارسال کیا گیا۔اس دوران جائزہ کار پی رام نے کہاکہ سماج کے ہر طبقہ کو خواتین کے حقوق کے لئے کھڑا ہونا چاہئے اور بیداری مہم میںحصہ لینا چاہئے۔اس موقع پر سمترا،شیام کور،ببیتا،گیتا،سنگیتا،سونیا،سروج،کشمیری،شمیم،رجنیش، نیلم،ریکھا شرما،شکنتا،سویتا، رضیہ،ریاست،شہناز،مکیش وغیرہ سمیت بڑی تعداد میں خواتین موجودرہیں۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close