دیوبند

پیٹرول ڈیژل کی قیمتوں میں اضا فے اور مختلف مسائل کو لے کر سماج وادی پارٹی نے کلکٹریٹ پر دھرنا دیتے ہوئے صدر جمہوریہ کو میمورنڈم ارسال کیا

دیوبند 25فروری (رضوان سلمانی)
سماج وادی پارٹی قیادت کی جانب سے ریاست کی احتجاج کے تحت آج ضلع سہارنپور میں پیٹرول اور ڈیژل کے داموں میں اضافہ ااور کسانوں وعوام کے مختلف مسائل کو لیکر سماجوادی پارٹی کے کارکنان ولیڈران نے ضلع کلکٹریٹ احاطہ میں دھرنا دینے کے علاوہ جلوس کی شکل میں ضلع کلکٹریٹ پہنچ کر احتجاجی مظا ہرہ کیا اور ایک میمورینڈر ڈی ایم کی معرفت سے صدرِ جمہوریہ کے نام ارسال کیا۔ اس موقعہ پر سماجوادی پارٹی کے لیڈران نے الزام عائد کیا کہ موجودہ بی جے پی حکومت کی غلط پا لیسیوں کے سبب عوام پریشان ہیں پیٹرول ڈیژل کی قیمتیں آزاد ہندوستان میںجتنی آج ہیں اتنا کبھی اضافہ نہیں ہوا۔ انہوں نے کہا تیل کی قیمتوں کا اثر ہر چیز پر پڑ رہا ہے ،روزمرہ کے استعمال اور کھا نے پینے کی اشیا ء کی قیمیتیں آسمان کو چھو رہی ہیں ،غریب ،مزدور ،کسان پریشان ہیں شو گر ملوں نے گنّا کسانوں کا بقایا ادا نہیں کیا ہے ۔ صدرِ جمہوریہ کے نام ارسال کئے میمورنڈم میںجہاں تینوں زرعی قوانین واپس لئے جا نے کا مطالبہ کیا گیا اسی کے ساتھ کہا گیاکہ کو ر ونا کے سبب ملک کے معاشی حالا ت پہلے ہی خراب ہیں، اب پیٹرول ، ڈیژل اور رسوئی گیس کی قیمتوں میں اضافہ سے عوام کی کمر ٹوٹ گئی ہے ۔اس لئے ضروری ہے کہ مر کزی سرکار عوام کے مفادات کا خیال رکھتے ہوئے قیمتوں پر کنٹرول کرے اور بڑھی ہو ئی قیمتوں میں تخفیف کرے ۔میمورنڈم میں کہا گیا ہے کہ شوگرفیکٹریوں نے ابھی تک پچھلے گنّے کی فصل کی بقایہ رقم ادا نہیں کی ہے بلکہ شوگر فیکٹریوں کو چلے ہوئے چار ماہ کا عرصہ گزرچکا ہے مگر ابھی تک فصلوں کے ریٹ حکومت کی جانب سے متعین نہیں کئے گئے ہیں۔جس کی وجہ سے کسان پریشان ہیں۔ میمو رینڈم میں صدرِ جمہوریہ سے مطالبہ کیا گیا کہ گنّے کے بقایا کی ادا ئیگی کے علاوہ گنّے کی فصل کے داموں میں اضا فہ کیا جا ئے اور تینوں زرعی قوا نین واپس لئے جا ئیں ۔ میمورنڈم میں مطالبہ کیا گیا ہے کہ خوردنی اشیاء گھی، تیل، آلو، پیاز جیسی عام آدمی کے روز مرہ کی اشیاء عام آدمی کے دسترس سے دور ہو تی جا رہی ہیں ،عام آدمی کی آمدنی گھٹ رہی ہے اور مہنگا ئی بڑھ رہی ہے جس سے عام آدمی کا جینا دوبھر ہوتا جا رہا ہے، مہنگا ئی پر روک لگا ئی جائے۔ اس وقت ریاست میں قانون نظم ونسق پوری طرح سے تبادہ ہوچکا ہے، خواتین کی عزتیں محفوظ نہیں ہیں، چاروں طرف بدعنوانی کا بول بالا ہے ، لوٹ ، ڈکیتی، راہزنی عام بات ہوچکی ہے، بگڑتی صورت حال کے پیش نظر ریاست کے داخلہ سیکریٹری اور ڈی جی کو معطل کیا جائے۔ میمو رنڈم میں الزام لگا یا گیا کہ صوبہ کی پولس فرضی انکا ئونٹر میں مصروف ہے جبکہ جرائم کا گراف مسلسل بڑھ رہا ہے ۔میمو رنڈم میں صدرِ جمہو ریہ سے مطالبہ کیا گیا کہ ان مطالبات پر فوری توجہ دیا جا ئے اور مطالبات کو تسلیم کیا جا ئے ۔ میمو رنڈم دینے والوں میں سماجوادی پارٹی کے ممبر اسمبلی سنجے گرگ اور سابق وزیرِ مملکت سرفراز خاں،سابق ایم ایل سی عمر علی خان کے علاوہ ضلع صدر چو دھری رودر سین، شہر صدر اعظم شاہ ، چو دھری جگپال داس، نواب گو جر، فیصل سلمانی، مستقیم رانا، فہد گاڑہ ، چو دھری عبدالغفور، پروین باندو کھیڑی، ندیم قریشی، فہد سلیم ، آکاش کھٹیک، شاہنواز چاند،وردان با لمیکی، آشیش با لمیکی ، تحسین قریشی ،پردیپ رانا،سندیپ چودھری وغیرہ کے نام موجود رہے ۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close