دیوبند

دیوبند، موجودہ حالات میں کانگریس ہی ایک ایسی جماعت ہے جو ملک کو بچا سکتی ہے : منندر سود

دیوبند، 21؍ جنوری (رضوان سلمانی) کانگریس کے ریاستی سکریٹری اور ضلع انچارج منندر سود والمیکی نے کہا کہ موجودہ حالات میں کانگریس ہی ایک ایسی جماعت ہے جو ملک کو بچا سکتی ہے کیو ںکہ بی جے پی جیسی جماعت صرف نفرت پھیلاکر اقتدار میں آنا جانتی ہے ، مگر اقتدار میں آنے اور ملک کو چلانے میں بڑا فرق ہے۔ ان خیالات کا اظہار منندر سود والمیکی آج گنگوہ اسمبلی حلقے کی نیائے پنچایت سکندپور کے گائوں بین پورمیں ایک پروگرام سے خطا ب کررہے تھے ۔ انہوں نے کہا کہ اترپردیش میں عوام اور کانگریس پارٹی کے درمیان گزشتہ 32سالوں سے رابطے کی کمی ہورہی تھی اس کو محسوس کرتے ہوئے اترپردیش انچارج پرینکا گاندھی نے پارٹی کے سبھی عہدیداران کو عوام کے درمیان میں رابطہ کرنے کے لئے بھیجا ہے۔ انہوںنے کہا کہ ہم چاہتے ہیں کہ زیادہ سے زیادہ لوگ پارٹی میں شامل ہوکر پارٹی کو مضبوط کریں۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی اقتدار میں آنے کی خاطر پھوٹ ڈالو سیاست کرو کی پالیسی اختیار کئے ہوئے ہیں، ملک چلانے کا جتنا تجربہ کانگریس پارٹی کے پاس ہے اتنا کسی پارٹی کے پاس نہیںہے، تجربہ کی کمی کی وجہ سے ہی ملک برباد ہورہا ہے، ملک کی جی ڈی پی بہت نچلی سطح پر پہنچ چکی ہے اور ملک کے وزیر اعظم جی ڈی پی پر بات کرنے کو تیارنہیں ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ روزگار کی سطح گزشتہ 50سالوں میں نچلی سطح پر پہنچ چکی ہے۔ وزیر اعظم رـوزگار کے بارے میں بھی بات کرنے کو تیار نہیں ہیں۔ کانگریس کے ضلع صدر مظفرعلی نے کہا کہ بی جے پی کی مرکزی اور ریاستی سرکار کو کسانو ںکی کوئی چنتا نہیںہے ، ملک کا کسان اپنے جائز مطالبات کو لے کر گزشتہ 60دن سے شدید سردی میں کھلے آسمان کے نیچے سڑکوں پر احتجاج کررہا ہے اور اب تک 70کسان اپنی شہادت دے چکے ہیں اور ملک کے وزیر اعظم ان کے اہل خانہ کو خراج عقیدت تک نہیں دے سکے۔ انہو ںنے الزام عائد کیا کہ وزیر اعظم نریندر مودی صنعت کاروں کے سامنے کسان دکھائی نہیں دے رہے ہیں۔ انہو ںنے کہا کہ کانگریس کسانوں اور مزدوروںکی لڑائی مضبوطی کے ساتھ لڑنے کا کام کرے گی ۔ سینئر کانگریسی لیڈر اور اے آئی سی سی کے رکن جاوید صابری نے کہا کہ بی جے پی کانگریس کے سابق قومی صدر راہل گاندھی اور سونیا گاندھی پر روز بروز الزامات عائد کرتے رہتے ہیں اگر وہ ملزم ہیں تو انہیں جیل کیو ں نہیں بھیجتے ۔ جو شخص غلط کام کرتا ہے وہ حکومت سے ڈرتا ہے ، جس طریقے سے سماج وادی پارٹی کے قومی صدر اکھلیش یادو اور بہوجن سماج پارٹی کی رہنما مایاوتی خاموشی اختیا رکرکے بی جے پی کا اندرونی طریقے سے حمایت کررہی ہے ، جب کہ راہل گاندھی اور کانگریس پارٹی بی جے پی اور مرکزی حکومت کا بڑی مضبوطی کے ساتھ سامنا کررہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اگر عوام کی آواز کو حکومت کے سامنے مضبوطی سے کوئی رکھ رہا ہے تو وہ صرف کانگریس پارٹی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ عوام کو بھی سوچ سمجھ کر فیصلہ لینا چاہئے ۔ اس موقع پر منیش تیاگی، دشینت رانا، فاضل حسن، حمزہ مسعود، راج کمار شرما وغیرہ نے بھی خطاب کیا۔ پروگرام میں رام پال چودھری کو بین پور نیائے پنچایت کا صدر اور ستیش کمار سینی کو لکھنوتی نیائے پنچایت کا صدر منتخب کیا گیا ۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close