دیوبند

دیوبند، اکھلیش یادو کی اپیل پر سماج وادی پارٹی کارکنان نے کسانوں کو زرعی قانون کے نقصانات بتائے

کسانوں کی اس تحریک میں سماج وادی پارٹی برابر حصہ داری کرتی رہے گی: معاویہ علی

دیوبند، 25 ؍ دسمبر (رضوان سلمانی) سماج وادی پارٹی کے رہنما اکھلیش یادو کی اپیل پر آج سماج وادی پارٹی کارکنان نے ضلع سہارنپور میں الگ الگ گائوں میں پہنچ کر چوپالوں کا انعقاد کیا اور زرعی قوانین کے خلاف کسانوں کو بیدار کیا۔ اسی تناظر میں سماج وادی پارٹی کے سابق اسمبلی رکن معاویہ علی نے گائوں تگری جاکر کسانوں کے درمیان چوپال کی اور کہا کہ موجودہ حکومت تکبر میں کسانوں کے مطالبات کو تسلیم نہیں کررہی ہے ، اس کالے قانون کو جب تک حکومت واپس نہیں لیتی ہے تب تک کسانوں کی اس تحریک میں سماج وادی پارٹی برابر حصہ داری کرتی رہے گی ۔انہوں نے کہا کہ اس حکومت آج ملک بھر کے کسانو ںکو سڑکوں پر لاکر کھڑا کردیا ہے ، کسان اس ملک کا ’’ان داتا‘‘ ہے ۔ جس کے خلاف زیادتی قطعی طو رپر برداشت نہیں کی جائے گی اور حکومت کے کسان مخالف اس سیاہ قوانین کی ہر سطح پر مخالفت کی جاتی رہے گی۔ معاویہ علی نے کہا کہ ہم ہر طریقے سے کسانوںکے ساتھ ہیں ۔ انہوںنے کسانوں کو ان قوانین کے نقصانات کے بارے میں بھی تفصیل سے آگاہ کیا، اُدھر گناسمیتی کے سابق چیئرمین پرویندر چودھری کی قیادت میں شاہ پور ، سماج وادی پارٹی اقلیتی سیل کے ضلع صدر رائو مسیح اللہ کی قیادت میں گائوں بنہیڑہ اور گائوں انبہٹہ شیخاں میں ،سابق ضلع جنرل سکریٹری سکندر علی کی قیادت میں چوپالوں کا انعقاد کرکے کسانوںکو تینوں قوانین سے ہونے والے نقصانات سے آگاہ کیا۔ سماج وادی پارٹی کے سینئر لیڈر فرہاد گاڑا نے بھی سہارنپور علاقے کے مختلف گائوں میں چوپالوں کا انعقاد کرکے اس کالے قانون کے بارے میں کسانو ںکو سمجھایا ۔ آج گائوں شاہ پور میں پروین سینی کے گھیر میں منعقدہ چوپال میں پرویندر چودھری نے کہا کہ سرکار کسانوں کے مطالبے کے بعد بھی ایم ایس پی پر تحریری طو رپر یقین دہانی کرانے کو تیار نہیں ہیں ، انہو ںنے زرعی قوانین کو کسان مخالف بتاتے ہوئے اسے واپس لئے جانے تک مخالفت کرنے کا عہد دلایا ۔ اس دوران لقمان تیاگی، نریندر پنوار، بھورا تیاگی، صدام قریشی، بھیم تیاگی، شمشاد وغیرہ موجود رہے۔ اُدھر گائوں انبہٹہ شیخاں میں منعقدہ چوپال سے خطاب کرتے ہوئے سماج وادی پارٹی کے سابق ضلع جنرل سکریٹری سکندر علی نے کہا کہ کسان مرکزی حکومت کی جانب سے لائے گئے زرعی قوانین کی مخالفت کرکے اس شدید سردی میں سڑکوں پر بیٹھے ہیں لیکن حکومت کو کسانوں سے زیادہ ان صنعت کاروں کی فکر ہے جن کے دبائو میں مذکورہ قانون کسانوں پر تھوپا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ سماج دای پارٹی کندھے سے کندھا ملاکر کسانوں کے ساتھ کھڑی ہے ۔ اس کالے قانون کو کسی بھی قیمت پر برداشت نہیں کیا جائے گا ۔ اس موقع پر حاجی زندہ حسن، بابر حیات، احسان تیاگی، پرویز عالم، وویک، لقمان تیاگی اور ابھیشیک کمار وغیرہ موجود رہے۔ سماج وادی پارٹی اقلیتی سیل کے ضلع صدر رائو مسیح اللہ نے کہا کہ زرعی قوانی کے خلاف کسان گزشتہ ایک ماہ سے سڑکوں پر بیٹھے ہیں لیکن حکومت ان کی طرف توجہ دینے کو تیار نظرنہیں آرہی ہے۔ اس دوران انہوںنے زرعی قوانین کی کمیاں گنواتے ہوئے کہا کہ اترپردیش کے کسانو ںکا حال بھی بہار جیسا ہوجائے گا اوریہاں کا کسان مزدور نقل مکانی کرنے کو مجبور ہوجائے گا ۔ اس دوران نفیس رانا، ہارون رانا، ثناء اللہ، عطاء اللہ، سونو، شہزاد، عاطف، حاجی فتح محمد ، رائو سہیل، صفدر رانا، عمیر رانا اور رائو حسین رانا موجود رہے۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close