دیوبند

دیوبند، جمعیۃ فلاح انسانیت کی جانب سے غرباء میں کمبل تقسیم کئے گئے

دیوبند، 25 ؍ دسمبر (رضوان سلمانی) اس وقت پورا ملک شدید سرد موسم اور کپکپا دینے والی سردی کی زد میں ہے، دہلی، مغربی یوپی اور پنجاب کے علاقوں میں درجۂ حرارت نقطۂ انجماد کے قریب قریب پہنچ گیا ہے جہاں لوگ اپنے گھروں سے باہر نکلنے کو تیار نہیں ہی وہیں غریب اور نہایت کسمپرسی کی حالت میں کھلے آسمان کے نیچے شدید راتیں گزارنے والے افراد ایسے لوگوں کے منتظر ہیں جو انہیں جرسی سویئٹر کے علاوہ کمبل اور لحاف مہیا کرادیں اور وہ جان لیوا سرد ترین موسم سے اپنے آپ کو محفوظ رکھ سکیں۔ شدید سردی کو دیکھتے ہوئے جمعیۃ فلاح انسانیت کی جانب سے آج غریب اور بے سہارا لوگوں کو کمبل تقسیم کے لئے ایک پروگرام کا انعقاد کیا گیا جس میں سیکڑوں کی تعداد میں لوگوں کو کمبل تقسیم کئے گئے ۔ اس موقع پر جامعہ قاسمیہ دارالتعلیم والصنعہ کے مہتمم مولانا ابراہیم قاسمی نے کہا کہ تنظیم کے قیام کو تقریبًا کئی سال کا عرصہ ہوگیا ہے اس دوران تنظیم کے چیئرمین مولانا شاہ عالم نے خدمت خلق سے متعلق شاندار خدمات انجام دی ہیں۔ اس طرح کے پروگراموں سے سماج کو مضبوطی ملتی ہے اور بے سہارا لوگوں کی مدد ہوتی ہے انہوں نے کہا کہ اس طرح کے پروگرام صاحب استطاعت افراد کو کرتے رہنے چاہئے اس سے خدمت خلق کا جذبہ پیدا ہوتا ہے ،تنظیم کے چیئرمین مولانا شاہ عالم نے اس تنظیم کی تشکیل کا مقصد غریب ا ور بے سہارا لوگوں کی مدد کرنا ہے ۔اسی کے ساتھ انہوں نے کہا کہ مستقبل میں بھی ہماری تنظیم کے ذریعہ غریب اور بے سہارا افراد کو تعلیم ،صحت اور جو بھی سماج کو فائدہ پہنچانے والے کام ہوں گے اس کے لئے جدوجہد جاری رہے گی ۔ انسانیت کا تقاضہ ہے کہ ہم اس شدید سردی کے عالم میں ان لوگوں کا خیال کریں جو اس سردی سے بچائو کرنے میں قاصر ہیں ۔ ضرورت اس بات کی ہے کہ غربا میں زیادہ سے زیادہ مدد کرنے کا جذبہ ہر انسان کے اندر پیدا کیا جائے ۔ نگرپالیکا کے رکن سید حارث اور ’’نظر‘‘ کے صدر نجم عثمانی نے اس دوران اپنے مشترکہ خطاب میں کہا کہ موسم سخت ترین چل رہا ہے ، سردی کی شدت بہت زیادہ ہے اور اس موسم میں سب سے زیادہ پریشان وہ لوگ ہیں جو مفلوک الحال ہیں، ان کی جانب توجہ کرنا اور اس موسم سے ان کو تحفظ فراہم کرنا انسانیت کا تقاضہ ہے ، اسی تقاضہ کے مدنظر جمعیۃ فلاح انسانیت کی جانب سے غربا میں کمبل تقسیم کئے جارہے ہیں ۔ غربا کی مدد کرنا ایک بڑا کام ہے ، جو لوگ اس کام میں مصروف ہیں ان کی حوصلہ افزائی بھی ضروری ہے۔ اس موقع پر مولانا سالم اشرف، صدام حسین ، صائم صدیقی، نجم عثمانی، سید حارث وغیرہ موجود رہے۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close