دیوبند

سابق ایم ایل اے ششی بالا پنڈیر گائوں کے لوگوں کے مسائل سنتے ہوئے

دیوبند ؛19؍ جنوری(رضوان سلمانی) بجلی صارفین کی جانب کروڑوں روپئے کی واجب الادا رقم جمع نہ کرائے جانے کے ردِ عمل میں بجلی محکمہ کی جانب سے دیوبند کے قریبی گائوں نونا بڑی سمیت آٹھ گائوں کے بجلی کنکشن کئی دنوں قبل کاٹ دئے گئے تھے ، جس کی وجہ سے مذکورہ دیہی علاقوں کے باشندہ ہی نہیں بلکہ امتحانات کی تیاری کرنے والے طلبہ اور طالبات کو بھی سخت پریشانیوں کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔ اتوار کے روز سماج وادی پارٹی کی لیڈر اور سابق ایم ایل اے ششی بالا پنڈیر نونا بڑی گائوں پہنچی اور انہوں نے گائوں کے لوگوں سے ملاقات کی ملاقات کے دوران گائوں کے لوگوں نے انہیں بجلی کنکشن کاٹے جانے کے سبب اپنی پریشانیوں سے واقف کرایا جس کے بعد ششی بالا پنڈیر نے پاور کاپوریشن کے افسران سے فون پر بات کی اور کاٹے گئے بجلی کنکشن کو فورا بحال کرنے اور گائوں میں کیمپ لگاکر بجلی کے بلوں کی بقایا رقم وصول کئے جانے کی بات کی انہوں افسران کو بجلی صارفین کی مجبوریوں کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ جب کسانوں کو گنے بقایاجات کی ادائیگی وقت پر نہیں ہوگی تو وہ کیسے بلوں کی ادائیگی اور دوسرے اخراجات کرپائیں گے ، انہوں نے کہا کہ اگر حکومت وقت پر چینی ملوں سے یہ بقایا جات کی ادائیگی کرادے تو کسانوں کے سامنے اس طرح کی پریشانیاں نہیں آئیں گی۔ انہوں نے افسران سے کہا کہ بجلی کے کنکشن کاٹے جانے کے سبب جہاں طلبہ وطالبات پریشان ہیں وہیں ای رکشہ کے مالکان بھی بجلی نہ ہونے کے سبب ای رکشہ نہیں چلاپارہے ہیں، جس کی وجہ سے ان کے بچوں کو فاقہ کشی کا سامنا کرنا پڑرہا ہے، ششی بالا پنڈیر نے بجلی افسران سے بجلی کی سپلائی فوری طور پر بحال کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔ اس موقع پر جے ویر سنگھ، رمضانی قریشی، سکندر علی، نریندر اور تپیش وغیرہ موجود رہے۔

مزید پڑھیں

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

جواب دیجئے

Back to top button
Close
Close