دیوبند

دیوبند، جمعیۃ علماء یونٹ مظفرنگر کی جانب سے کسانو ں کا کیا گیا استقبال

چند بڑے تاجروں کونفع پہنچانے کی وجہ سے ملک کے کسانوں کو برباد نہ کیا جائے : قاری ذاکر

دیوبند، یکم؍ دسمبر (رضوان سلمانی) جمعیۃ علماء ہند کے ناظم عمومی مولانا سید محمود اسعد مدنی کی ایماء پر جمعیۃ علماء ضلع مظفر نگر کی جانب سے دہلی جانے والے کسانوں کا جمعیۃ علماء کے ضلعی دفتر مسجد عاشق الٰہی وکاس بھون کے سامنے اور موضع جڑودہ میں ہایوے پر پرزور استقبال کیا گیا اور کھانے کی اشیاء پھل،پانی کی بوتلیں تقسیم کی گئی اس موقع پر جمعیتہ علماء مغربی اتر پردیش کے سکریٹری قاری ذاکر حسین نے کہا کہ کسانوں کے ذریعے اپنے حقوق کیلئے چلائی جا رہی مہم میں جمعیۃ علماء کسانوں کے ساتھ ہے آج ملک گیر سطح پر کسان یکجہ ہو کر کرشی بل کی مخالفت کر رہے ہیں جمعیۃ علماء کے کارکنان کے ذریعے کسانوں کی حوصلہ افزائی کے لئے جگہ جگہ کسانوں کا استقبال اور کھانے پینے کا نظم کیا گیا ہے۔ قاری ذاکر حسین نے مزید کہا کہ جمعیۃ علماء ہند نے ہمیشہ ظلم کے خلاف آواز بلند کی ہے۔ اسی لئے جمعیۃ علماء ہند کسانو ںپر ہوئے ظلم و زیادتی کو کسی قیمت پر برداشت نہیں کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ ہم سرکار سے مطالبہ کرتے ہیں کہ ملک کی امن و سلامتی کو باقی رکھنے اور عوام کی فلاح و بہبود کیلئے ملک کے مفاد میں سہی فیصلہ لیں، چند بڑے تاجروں کونفع پہنچانے کی وجہ سے ملک کے کسانوں کو برباد نہ کیا جائے ۔ انہو ںنے کہا کہ جمہوری ملک میں ہر طبقے کو جمہوری طریقے سے اپنی آواز حکومت تک پہنچانے کا حق ہے ، کسانو ںکو گرفتا ر کرکے یا انہیں جھوٹے مقدمات میں پھنساکر ان کی آواز کو دبایا نہیں جاسکتا۔ انہو ںنے کہا کہ وبا کے اس دور میں سخت سردی اور کھلے آسمان کے نیچے اپنا گھربار چھوڑ کر نکلے کسانوں پر ٹھنڈے پانی کی بوچھار کرنا غیرانسانی کارروائی ہے۔ ارباب اقتدار کو معلوم ہونا چاہئے کہ بزرگ اور معذور کسان بھی جس تحریک کا حصہ ہوں اس پر آنسو گیس کا استعمال کتنا خطرنا ک ثابت ہوسکتا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کو کسانو ںکے مطالبات ماننے میں ذرا بھی تاخیر نہیں کرنی چاہئے، کسانوں کے مطالبات پوری طرح جائز اور واضح ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ جمعیۃ علماء ہند اس مشکل گھڑی میں ملک کے کسانوں کے ساتھ ہے اور ہر محاذ پر کسانوں کا تعاون کیا جائے گا ۔اس موقع پر قاری محمد صادق، مولانا محمد ارشد نصیر پور،قاری عبدالماجد،قاری محمدعادل،مولانا محمدارشد جڑودہ،حافظ اکرام،عبدالکلام،احسان تیاگی محمد شاہ عالم،حاجی عمران،حافظ عبداللہ،محمد اصغر،قاری خلیل،قاری نفیس،انتظار راناوغیرہ حضرات شریک رہے۔ دوسری جانب محلہ ٹاکان میں منعقدہ کانگریس کی میٹنگ سے خطاب کرتے ہوئے کانگریس کے شہر صدر تنظیم صدیقی نے کہا کہ بی جے پی کے دور اقتدار میں کسانوں پر کالا قانون تھوپا گیا جس کے لئے آج ملک کا کسان سخت سردی کے موسم میں سڑکوں پر اترا ہوا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ملک بھر میں افراتفری کا ماحول ہے ، بے روزگار نوجوان سڑکوں پر روزگار کی تلاش میں بھٹک رہا ہے اور اب حکومت کی غلط پالیسیوں کی وجہ سے ملک کا کسان بھی سڑکوں پر اترنے کو مجبور ہے۔ تنظیم صدیقی نے کہا کہ مرکزی حکومت ہٹ دھرمی پر اڑی ہوئی ہے ، جب کسانوں کو یہ کالا قانون منظور نہیں ہے تو پھر حکومت اسے زبردستی کسانو ںکے اوپر کیوں تھوپنا چاہتی ہے ۔ انہوں نے کہاکہ کسان فصلیں اُگاتا ہے تو ملک کے عوام اسے کھاتی ہے، اس لئے حکومت کو چاہئے کہ وہ کسانوں کے مطالبات کو فوراً تسلیم کرے اور انہیں راحت پہنچانے کا کام کرے۔ میٹنگ میں شہزاد عثمانی، راحت خلیل، نیتا مظاہر حسن، اسلم، انوار احمد وغیرہ موجود رہے۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close