دیوبند

سود کاروباری نے 6 سال میں ایک شخص پر بنائے 13لاکھ روپے! متأثرہ نے تھانہ میں دی تحریر

دیوبند، 15؍ جنوری (رضوان سلمانی) ایک شخص نے محلہ میں ہی سود کا کاروبار کرنے والے ایک شخص سے کام کے لئے ڈیڑھ لاکھ روپے کا قرض لیا تھا ، سود سمیت ساڑھے 6لاکھ روپے ادا کرنے کے باوجود بھی متأثرہ شخص پر سود کا کاروبار کرنے والے شخص نے 8لاکھ روپے کا قرض ابھی باقی کیا ہوا ہے ۔ متأـثرہ شخص نے مکان فروخت کرکے سود سمیت رقم کی ادائیگی کرنے کے بعد بھی ملزم نے قرض دار کو یرغمال بنالیا ہے ۔ متأثرہ شخص کے اہل خانہ نے دیوبند کوتوالی پہنچ کر ملزم کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کیا اور انصاف کی فریاد کی۔ موصولہ اطلاع کے مطابق محلہ سرائے کہران کے رہنے والے انیس کی بیوی اسماء نے دیوبند کوتوالی میں تحریر دیتے ہوئے بتایا کہ اس کے شوہر نے محلہ کے ہی ایک شخص سے گزشتہ 6سال قبل اپنا نام مکان گروی رکھ کر ڈیڑھ لاکھ روپے کا قرض لیا تھا ، خاتون کا الزام ہے کہ جب کچھ وقت بعد ہی ملزم نے قرض واپسی کا تقاضا کیا تو اس کے شوہر نے مکان فروخت کرکے ساڑھے 6لاکھ روپے مع سود واپس کردیئے ۔ متأـثرہ خاتون کا الزام ہے کہ اب ملزم اس کے شوہر پر 6-7لاکھ روپے بتاکر ان پر ظلم کررہا تھا ، خاتو نے بتایا کہ آج جب اس کا شوہر انیس صبح کے وقت ملزم کے گھر گیا تو اس کے شوہر کو یرغمال بنالیا اور اس کے شوہر کے واپس نہ آنے پر جب وہ اپنی نند کے ساتھ ملزم کے گھر اپنے شوہر کے سلسلے میں معلومات حاصل کرنے گئی تو ملزم نے ان کے ساتھ بھی نازیبا سلوک کرتے ہوئے مارپیٹ کرکے ان کو بھگادیا۔ خاتون اہل خانہ کے ساتھ آج کوتوالی پہنچی اور ملزم کے پاس سے اس کے شوہر کو آزاد کرانے کا مطالبہ کیا۔

مزید پڑھیں

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

جواب دیجئے

Back to top button
Close
Close