دیوبند

دیوبند، مجلس شوریٰ کے ذریعہ نئے انتخابات پر مبارکباد کا سلسلہ جاری

قاری عثمان منصورپوری اور مولانا ارشد مدنی کے تجربات سے دارالعلوم کو فیض پہنچے گا: سلیم عثمانی

دیوبند،17؍ اکتوبر(رضوان سلمانی) دارالعلوم دیوبند کی ہیئت حاکمہ مجلس شوریٰ کے تاریخ ساز فیصلوں سے کارکنان و خدام جمعیۃ علماء ہند میں خوشی اور مسرت کا سلسلہ جاری، اراکین جمعیۃ علماء ہند شہر دیوبند و ضلع سہارنپور نے مجلس شوریٰ دارالعلوم دیوبند نے جمعیۃ علماء ہند کے صدرامیر الہندمولانا قاری سید محمد عثمان منصور پوری کو دارالعلوم دیوبند کا کارگزار مہتمم اور ملت اسلامیہ ہند کے ترجمان جانشین شیخ الاسلام مولانا سید ارشد مدنی کو صدر مدرس کے عالی مرتبت عہدوں پر منتخب کیا گیا ہے تمام اراکین اور خدام دارالعلوم دیوبند میں خوشی اور مسرت کا اظہار کیا جارہاہے ۔اس خوشی کے موقع پر جمعیۃ علماء ہند کے فعال رکن سلیم احمد عثمانی نے امیر الہند مولانا قاری محمد عثمان کو مبارکباد دیتے ہوئے کہا ہے کہ ان کے دور اہتمام میں دارالعلوم دیوبند مزید ترقیوں کی راہ پر چلتے ہوئے ان کی قیادت میں انتظامی امور میں مزید اضافہ ہوگا ۔دارالعلوم دیوبند میں ایک عرصے سے ان کی انتظامی امور کی کمی کو محسوس کیا جارہا تھا اب مجلس شوریٰ نے مہتمم مولانا و مفتی ابوالقاسم نعمانی کا ہاتھ بٹانے کے لئے نہایت کامیاب و موزوں ترین شخص کا انتخاب کیا ہے ۔انہوں نے کہا کہ مولانا سید ارشد مدنی کے صدر المدرسین منتخب ہونے کے بعد تعلیمی اور تدریسی نظام میں نمایاں تبدیلیاں رونما ہوں گی ۔اس سے قبل بھی جب وہ ناظم تعلیمات تھے تو ان کی فعالیت سے دارالعلوم دیوبند نے نمایاں تبدیلیاں رونما ہوئی تھی آج بھی ان کے انتخاب سے دارالعلوم میں تدریسی امور میں نمایاں کامیابیاں ملیں گی اور دارالعلوم کی طرف جو متعصبانہ نگاہیں اٹھ رہی ہیں مولانا سید ارشد مدنی اور مولانا قاری محمد عثمان کی بصیرت افروزی سے ان پر قدغن لگے گا ان کی دور رس نگاہیں ان فتنہ پروروں کے حوصلوں کو پست کرنے میں معاون ثابت ہوں گی۔جمعیۃ علماء ہند شہر دیوبند یونٹ کے سکریٹری عمیر احمد عثمانی نے تینوں حضرات کو مبارکباد دیتے ہوئے امید ظاہر کی ہے کہ ان حضرات کی خدمات جلیلہ نمایاں ہیں اور یقین کامل ہے کہ ان انتخابات سے دارالعلوم دیوبند کا جو عالم اسلام میں وقار اور بلند رتبہ قائم ہے اس میں اضافہ ہوگا اور ان حضرات کی دور رس نگاہوں سے اس میں بلندی حاصل ہوگی۔ دوسری جانب جامعہ بدرالعلوم گڑھی دولت کے مہتمم مولانا محمد عاقل قاسمی کو مجلس شوریٰ کا ممبر نامزد ہونے پر بھی خوشی کا اظہار کرتے ہوئے جمعیۃ علماء ہند ضلع سہارنپور کے سکریٹری مولانا ابراہیم قاسمی مہتمم جامعہ قاسمیہ دارالتعلیم والصنعہ نے کہا ہے کہ مجلسِ شوریٰ میں مولانا عاقل قاسمی کا انتخاب ایک خوش آئین انتخاب ہے ان۔ کی فعالیت اور مدارس اسلامیہ میں ان کی خدمات اور تجربات سے شہری کو فائدہ اٹھانے کا موقع ملے گا ان کا انتخاب بہت خوش آئین ہے وہ مبارک باد کے مستحق ہیں اللہ ربّ العزت ان کی اس خدمت کو شرف قبولیت سے نوازے۔نبیرہ شیخ الہند حاجی ریاض محمود نے مجلس شوریٰ کے حسن انتخاب پر خوشی کااظہار کرتے ہوئے کہاکہ اب ایک مرتبہ پھر دارالعلوم دیوبند میں تاریخ کا سنہرے دور لوٹے گا اور ادارہ کو تعلیمی، تربیتی اور انتظامی سطح پر مزید ترقیات حاصل ہوں گی۔انہوںنے کہاکہ قابل مبارکباد ہیں اراکین شوریٰ جنہوں نے جمعیۃ علماء ہند کے صدور مولانا سید ارشد مدنی اور قاری سید محمد عثمان منصور پوری کا ان عظیم عہدوں پر انتخاب کیا ہے،اس سے فیصلہ ادارہ کو خاطر خواہ فائدہ پہنچے گا۔انہوں نے شیخ الحدیث منتخب کئے جانے پر مہتمم مفتی ابوالقاسم نعمانی اور نومنتخب رکن شوریٰ مولانامحمد عاقل قاسمی کو مبارکباد پیش کی۔ مبارکباد پیش کرنے والوں میں چودہری محمد صادق نائب صدر تحصیل دیوبند، قاری سلیم احمد ،مولانا اسماعیل تھانوی ، قاری سعید عالم ،جمعیۃ علماء شہر دیوبند کے صدر صدرالدین انصاری ، ملا محمد اکرم وغیرہ شامل ہیں۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close