دیوبند

دیوبند اور روڑکی کے درمیان مجوزہ ریلوے لائن پروجیکٹ کے تحت ناجائز قبضوں کو انتظامیہ نے ختم کرایا

دیوبند ،6؍اکتوبر (رضوان سلمانی ) دیوبند اور روڑکی کے درمیان مجوزہ ریلوے لائن پروجیکٹ کے تحت جٹول اور مجہول زبردست پور گائوں میں موجود ریلوے محکمہ کی آراضی پر انتظامیہ نے ناجائز قبضوں کو ختم کرکے متعلقہ محکمہ کو قبضہ دلادیا۔ واضح ہو کہ ڈی ایم کے حکم پر انتظامیہ نے یہ کارروائی کی ہے، ا س کارروائی کے دوران پولیس فورس بڑی تعداد میں موجودرہی۔تفصیل کے مطابق دیوبند روڑکی نئی ریلوے لائن کے لئے آراضی کو ایکوائر کرنے کے دوران کئی مقامات پر مذکورہ گائوں کے باشندے سخت مخالفت کا اظہار کرچکے تھے،جس کی وجہ سے ریلوے کے محکمہ کی جانب سے مذکورہ پروجیکٹ کا کام مکمل نہیں ہوپارہاتھا جب اس سلسلہ میں کوئی آسان راہ نہ نکل پائی تو محکمہ ریل کی جانب سے ڈی ایم کے یہاں اس سلسلہ میں ایک تحریری شکایت کی گئی تھی، جس کے ردعمل میں مجسٹریٹ کے احکامات پر عمل درآمد کرتے ہوئے دیوبند کے ایس ڈی ایم راکیش کمارسنگھ اور سرکل آفیسر رجنیش اپادھیائے نیز ریونیو محکمہ کی ٹیم کو ساتھ لے کر جٹول اور مجہول زبردست پور گائوں پہنچ گئے۔ حالات کا جائزہ لینے کے بعد مذکورہ افسران کی نگرانی میں محکمہ ریل کی آراضی کی حدود بندی کردی گئی۔ حدود بندی سے مطمئن ہونے کے بعد مذکورہ آراضی کا قبضہ محکمہ ریل کو دلادیا گیا۔ محکمہ ریل کے ایگزیکیٹیو انجینئر کی موجودگی میں مذکورہ عمل مکمل کیاگیا۔اس دوران دونوں گائوں کی جانب سے کسی طرح کی کوئی مزاحمت نہیں کی گئی۔ افسران نے ریلوے محکمہ کی آراضی کی حدود بندی کے وقت پولیس کی بڑی تعداد کو موقع پر اور گائوں کے اطراف میں تعینات رکھا۔ ایس ڈی ایم راکیش کمار نے بتایا کہ دیوبندروڑکی ریلوے لائن کے تحت جٹول اورمجہول زبردست پور میں مجوزہ پروجیکٹ کے بند پڑے کام کو دوبارہ شروع کرادیاگیا ہے۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close