دیوبند

دیوبند ، سمپورن سمادھا دیوس میں 15فریادی شکایت لے کر پہنچے

دیوبند ،6؍اکتوبر (رضوان سلمانی ) سمپورن سمادھا دیوس(یوم ازالہ) میںاپنی شکایات لیکر پہنچے 15؍ فریادیوں میں سے کسی کی بھی شکایت کا موقع پر تصفیہ نہیں ہوسکا،حالانکہ اس دوران ایس پی دیہات بھی موجودرہے لیکن شکایت کنندگان موقع سے مایوس ہی لوٹے تاہم افسران نے متعلقہ محکمہ کے افسران کو تمام شکایات کو ترجیحی طورپر حل کرنے کی ہدایت دی ۔ہائیوے پر واقع بلاک دفتر میں منعقدسمپورن سمادھا دیوس(یوم ازالہ) پر ایس پی دیہات اشوک کمار مینا کی قیادت میں ایس ڈی ایم دیوبند راکیش کمار نے لوگوں کی شکایتیں سنیں۔ اس دوران 15؍ فریاد ی مختلف محکموں سے متعلق اپنی شکایات لیکر پہنچے لیکن کسی بھی فریاد ی کی شکایت کا موقع پر ازالہ نہیں کیا جاسکاہے۔ تھانہ ناگل علاقہ کے گاؤں سرسینا کے باشندہ پردیپ کمار نے اپنی شکایت میں بتایاکہ اس نے سال 2018ء میں اپنے کھیتوں کی آبپاشی کے لئے ٹیوبویل کے کنکشن کی مانگ کرتے ہوئے محکمہ کے اخراجات جمع کئے تھے،لیکن دو سال سے زائد وقت گزر جانے کے باوجود بھی ابھی تک پاورکارپوریشن کی جانب سے کنکشن نہیں دیاگیا۔ وہیںمحلہ بڑضیاء الحق کے باشندہ سعود عثمانی نے تحریر شکایت دیتے ہوئے بتایا کہ اس کے قبضہ والی خسرہ نمبر 3744؍ اور 3745؍ زمین پر کچھ لوگ رنجش کے تحت اسکی دیوار بار بار توڑ دیتے ہیں۔ جس سے اس کا بہت نقصان ہوچکاہے۔ متاثرہ سے ملزموں کے خلاف کارروائی کی مانگ کی ہے۔محلہ گوجر واڑہ باشندہ راجکمار نے بتایا کہ اس کا گھر کچی مٹی کی دیواروں سے بنا ہواہے،جو خستہ حالت میں ہے،اس پر پاور کارپوریشن نے بینڈ لگاکر تار لگا دیا تھا،اب وہ پکی چھت بنا رہاہے لیکن محکمہ برقیات بینڈ ہٹانے کو تیار نہیں ہے۔ بڈھیری گاؤں کے باشندہ کنور پال سنگھ نے بتایا کہ گاؤں کے کچھ لوگ اس کی تیار شدہ فصل کاٹ لے گئے، اس نے ملزموں کے خلاف کارروائی کی مانگ کی ہے۔ اس دوران سی او رجنیش کمار اپادھیائے،تحصیلدار، نائب تحصیلدار سمیت تحصیل سطح کے افسران و ملازمین موجودرہے۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

Leave a Reply

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close