دیوبند

بھارتیہ کسان یونین (سرو)کی میٹنگ کا انعقاد

دیوبند، 11؍ اگست (رضوان سلمانی) بھارتیہ کسان یونین (سرو) کے ضلع صدر جمال ناصر عثمانی نے کہا کہ پاور کارپوریشن کے افسران وملازمین بے لگام ہوچکے ہیں ، جہاں محکمہ کے ذریعہ بجلی بلوں میں اضافے کے نام پر کسانوں کو ٹھگا جارہا ہے وہیں چیکنگ کے نام پر عام آدمی کا استحصال کیاجارہا ہے ، جو کسی قیمت پر برداشت نہیں کیا جائے گا۔ محلہ ابوالمعالی سرسٹہ چوک پر واقع یونین کے دفتر پر منعقدہ میٹنگ سے خطاب کررہے تھے۔

انہوں نے کہا کہ بجلی محکمے کی ٹیم نے گزشتہ روز محلہ بیریان میں چیکنگ کے نام پر جس طرح خواتین کے ساتھ بدتمیزی کی اوررشوت کا مطالبہ کیا اس سے اندازہ ہوتا ہے کہ محکمہ کے ملازمین تاناشاہ رویہ اپنائے ہوئے ہیں جس کو کسی قیمت پر برداشت نہیں کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ لاک ڈائون کے دوران عام آدمی کے پاس دو وقت روٹی کے لئے پیسے نہیں ہیں اور اپنے خاندان کی کفالت کرنے کے لئے لوگ پریشان ہیں ، ایسے حالات میں بجلی محکمہ کے ملازمین کا رویہ افسوسناک ہے، اس کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے۔

انہوں نے کہا کہ اس سلسلے میں جلد ہی محکمہ کے ایکس ای این سے مل کر خاطی ملازمین پر کارروائی کرنے کا مطالبہ کیا جائے گا ۔ جمال ناصر نے کہا کہ اگر ملازمین کے خلاف کارروائی نہیں ہوتی تو ایکس ای این کے احاطے میں ہی کسان مظاہرہ کرنے کو مجبور ہوںگے۔اس موقع پر منیر پٹھان، شہرصدر شاہد قریشی، بلاک صدر ثاقب ، آکاش وغیرہ موجود رہے ۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

Leave a Reply

Back to top button
Close
Close