دیوبند

دیوبند، تمام منظورشدہ اسکولوں وکالجوں کو اس مشکل صورتحال سے باہر نکالنے کے لئے حکومت راحتی پیکج دے

دیوبند، 10؍ اگست (رضوان سلمانی) منظورشدہ اسکولوں وکالجوں کی تنظیم نے کورونا وائرس اور لاک ڈائون کی وجہ سے پریشان تعلیمی اداروں کے ذمہ داران ، اساتذہ اور ملازمین نے ریاستی حکومت سے راحت پیکج کا مطالبہ کرتے ہوئے مقامی ایم ایل اے کو ایک میمورنڈم دیاہے۔ تفصیل کے مطابق پیر کے روز تعلیمی اداروں کی تنظیم کے عہدیداران ، اساتذہ وملازمین نے صوبائی وزیر اعلیٰ کے نام ایک پانچ نکالی میمورنڈم دیوبند اسمبلی حلقہ کے ایم ایل اے برجیش سنگھ کو دیا۔

میمورنڈم میں کہاگیاہے کہ کورونا کی مہلک وبا کی وجہ سے تمام منظورشدہ اسکول وکالج گزشتہ 6 ؍ ماہ سے بندپڑے ہیں۔ جس کی وجہ سے تعلیمی اداروں کے مالکان ، اساتذہ اور ملازمین کے سامنے مالی دشواریاں پیداہوگئی ہیں۔ میمورنڈم میں مطالبہ کیاگیاہے کہ تمام منظورشدہ اسکولوں وکالجوں کو اس مشکل صورتحال سے باہر نکالنے کے لئے ایک راحتی پیکج دیاجائے اور اساتذہ وملازمین کو ماہانہ مناسب رقم بطور تنخواہ اداکی جائے۔ اس کے علاوہ یہ بھی مطالبہ کیاگیا کہ ستمبر ماہ سے سوشل ڈسٹینسنگ کی شرائط کے ساتھ تعلیمی اداروں کو کھولے جانے کی اجازت دی جائے۔

اساتذہ اور اداروں کے ذمہ داران کا یہ بھی مطالبہ ہے کہ اداروں کے بجلی کے بل اور بیمہ وغیرہ کی گزشتہ چھ ماہ کی قسطیں معاف کردی جائیں۔ تعلیمی اداروں کے بندرہنے کے دوران آن لائن تعلیم دینے والے اساتذہ کا مطالبہ ہے کہ انھیں کورونا مجاہدین تسلیم کرتے ہوئے اعزازات سے نوازاجائے۔ میمورنڈم دینے والوں میں بلاک صدر یوگیش شرما، جنرل سکریٹری، وشوکانت شرما، وکاس جین، وکاس پنوار کے علاوہ متعدد تعلیمی اداروں کے ذمہ داران اور اساتذہ شریک رہے۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

Leave a Reply

Back to top button
Close
Close