دیوبند

دیوبند میں احتجاج کے دوران گرفتار 10 نوجوانوں کو ملی رہائی

دیوبند، 19؍ جون (رضوان سلمانی)  دیوبند میں احتجاج کے دوران گرفتار کیے گئے 11 نوجوانوں میں سے 10 کو ہفتہ کو عدالت سے ضمانت ملنے کے بعد آج جیل سے رہا کر دیا گیا، حالانکہ ایک نابالغ کو ابھی ضمانت نہیں ملی ہے۔بی جے پی کی سابق ترجمان نوپور شرما کے ذریعہ پیغمبر اسلام حضرت محمد ﷺکی شان میں کی گئی گستاخی سے ناراض 10 جون کو دیوبند میں نوجوانوں نے احتجاج کیا تھا،

اس دوران پولیس نے طاقت کا استعمال کرتے ہوئے آٹھ نوجوانوں کو گرفتار کرلیاتھا اور انہیں جیل بھیج دیا گیا۔ بعد ازاں مزید تین نوجوانوں کو گرفتار کرکے جیل بھیج دیا گیا۔ اس معاملے میں نوجوانوں کا مقدمہ جمعیۃ علماء ہند نے لڑا، جنہیں ہفتہ کو عدالت نے ضمانت دے دی تھی اور اتوار کو دیوبند جیل سے 10 نوجوانوں کو رہا کر دیا گیا، حالانکہ ایک نابالغ کو ابھی تک ضمانت نہیں ملی۔ جیل سے رہائی کے بعد گھر پہنچنے والے نوجوانوں کے اہل خانہ نے ان کو گلے لگا لیا اور تقریباً 10 دن بعد اپنے بچوں کو بحفاظت گھر میں دیکھ کر والدین کی آنکھوں سے خوشی کے آنسو چھلک پڑے۔

 

واضح رہے کہ 10 جون کو دیوبند میں نماز جمعہ کے بعد پیغمبر اسلام حضرت محمد صلی اللہ علیہ وسلم کے بارے میں کئے گئے تبصروں کے خلاف احتجاجی مظاہرہ ہوا تھا۔ حالات بگڑتے دیکھ کر پولیس نے لاٹھی چارج کردیاتھا، اِس دوران پولیس نے موقع سے دانش، محمد لقمان، محمد کاشف، فضل کریم، زبیر، عباس، شاہ عالم اور شاہنواز کو گرفتار کیا تھا۔ عظیم، صادق اور زبیر کو 11 جون کو گرفتار کیا گیا تھا۔ پولیس نے سبھی کے خلاف دفعہ 147، 148، 149، 332، 353، 504، 506 اور 7 فوجداری قانون ایکٹ کے تحت مقدمہ درج کیا تھا۔ مقدمے میں 40 سے 50 نامعلوم نوجوانوں کو بھی شامل کیا گیاتھا۔ اس معاملے میں 11 نوجوانوں کو جیل بھیجا گیا تھا، جن میں سے 10 کی ہفتہ کو ضمانت ہو گئی تھی اور اتوار کو وہ جیل سے رہا ہو کر اپنے گھر پہنچ گئے۔

جمعیۃ علماء ہند کا کہنا ہے کہ اس نے عدالت میں 10 نوجوانوں کا کیس لڑا، ان کے وکلاء نے ان نوجوانوں کا مقدمہ عدالت میں لڑا ہے۔ جمعیت نے بتایا کہ نابالغ عباس کے اہل خانہ نے خود عدالت میں اس کا کیس لڑنے کا فیصلہ کیا ہے۔ بتایا کہ جن کا کیس جمعیۃ علماء ہند نے لڑا ہے ان سبھی 10 نوجوانوں کو ضمانت مل گئی۔جمعیۃ علماء ہند کے ضلع جنرل سکریٹری ذ ہین احمد نے کہا کہ دیوبند میں احتجاج کے دوران پولیس نے 11 نوجوانوں کو گرفتار کیا تھا، جن میں سے 10 کا مقدمہ جمعیت نے عدالت میں لڑاہے ،ان سبھی کو ضمانت مل گئی ہے اور تمام نوجوانوں کو اتوار کو جیل سے رہا کر دیا گیا ہے۔


قومی، بین الاقوامی خبروں کےعلاوہ تعلیم و کھیل اور دلچسپ و عجیب خبروں کے لیے ہندوستان اردو ٹائمز کو ٹویٹر TWITTER LINK اور فیس بک FACEBOOK LINK پر فالو کریں ۔ ہماری خبریں اپنے واٹس ایپ پر پانے کے لیئے کلک کریں 

ہماری یوٹیوب ویڈیوز

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button