دہلی

الیکشن کمیشن نے ہمارامطالبہ قبول کیا:ادھیررنجن چودھری

نئی دہلی 27فروری(آئی این ایس انڈیا)
مغربی بنگال سمیت پانچ ریاستوں میں اسمبلی انتخابات کی تاریخ کا اعلان کردیا گیا ہے۔ بنگال میں 27 مارچ سے 29 اپریل تک آٹھ مراحل میں انتخابات ہوں گے۔ تاریخوں کے اعلان کے بعد ممتا بنرجی نے الیکشن کمیشن پر سوالات اٹھائے ہیں۔لیکن کانگریس نے الیکشن کمیشن کے فیصلے کا خیرمقدم کیا ہے۔مغربی بنگال کانگریس کے صدر ادھیر رنجن چودھری نے کہاہے کہ ہم نے الیکشن کمیشن سے درخواست کی ہے کہ مغربی بنگال میں انتخابات کے دوران سیکیورٹی کے انتظامات کیے جائیں تاکہ لوگ بلا خوف انتخابات میں حصہ لے سکیں۔ چنانچہ الیکشن کمیشن نے فیصلہ کیا ہے کہ بنگال میں 8 مراحل میں انتخابات ہوں گے۔ٹی ایم سی کی چیف اوربنگال کی وزیراعلیٰ ممتا بنرجی نے الیکشن کمیشن پر الزام لگایا ہے کہ وہ بی جے پی کوفائدہ پہنچانے کے لیے 8 مرحلوں میں انتخابات کروا رہی ہے۔ تاریخوں پرممتابنرجی نے پوچھا ہے کہ کیرالہ ، تمل ناڈو اورپڈوچیری میں ایک ہی مرحلے میں انتخابات ہو رہے ہیں ، تو بنگال میں8 مراحل میں کیوں؟ بنگال میں ایک ہی ضلع میں دوتاریخیں ہیں ، تو کچھ میں تین مرحلے میں انتخاب کیوں؟ کیا مودی اور امیت شاہ کے دورے کے لیے انتخاب کی تاریخ رکھی گئی ہے؟ ممتا بنرجی نے کہا ہے کہ ایک ضلع میں دو یا دو انتخابات۔یہ بنگال کو فٹ بال کا میدان بنا کر 23 دن کھیلے گی۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close