دہلی

فیس بک تنازعہ: ہر ہندوستانی کو اس کے متعلق سوالات کرنے چاہیے : راہل گاندھی

نئی دہلی ، 18 اگست (آئی این ایس انڈیا)
فیس بک تنازعہ پر کانگریس کے سابق صدر راہل گاندھی نے مودی حکومت پر نشانہ بنایا ہے۔ راہل گاندھی نے کہا کہ ہم فیک خبروں ، نفرت انگیز تقریروں اور جانبدارانہ عمل کے ذریعہ قربانی کے بعد حاصل کی جانے والی جمہوریت کو کبھی زک نہیں پہنچنے دیں گے ۔انہوں نے مزید کہا کہ ہر ہندوستانی کووال اسٹریٹ جنرل کے مبینہ ’انکشافات‘ پرسوالات کرنے چاہیے۔خیال رہے کہ اس سے قبل راہل گاندھی نے وال اسٹریٹ جنرل کی رپورٹ کا حوالہ دیتے ہوئے بی جے پی اور آر ایس ایس کو نشانہ بنایا تھا۔ راہل گاندھی نے ٹویٹ کیا تھا کہ بی جے پی اور آر ایس ایس نے بھارت میں فیس بک اور واٹس ایپ پر قبضہ جمالیا ہے،وہ اس کے ذر یعہ جعلی خبریں اور نفرت کے فروغ کے لئے کام کرتے ہیں۔ وہ اس کا استعمال رائے دہندگان کو متأ ثر کرنے کے لئے بھی کرتے ہیں۔اسی اثنا میں پرینکا گاندھی نے اتوار کے روز ایک فیس بک پوسٹ میں لکھا کہ بی جے پی قائدین غلط معلومات اور نفرت انگیزی کے لئے فیس بک کا استعمال کررہے ہیں۔ کانگریس قائد نے الزام لگایا کہ بی جے پی نے بھی فیس بک کے عہدیداروں کے ساتھ ملی بھگت کی، تاکہ سوشل میڈیا پر اپنا کنٹرول برقرار رکھ سکیں۔پرینکا گاندھی نے اشتعال انگیز پوسٹ پر بی جے پی رہنما پر فیس بک کی طرف سے کارروائی نہ کرنے پر ایک رپورٹ شیئر کی ہے۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

Leave a Reply

Back to top button
Close
Close