دہلی

احتجاجیوں کودھمکی دینے والا سابق پولیس اہلکارگرفتار،دہلی پولیس کا دعویٰ

نئی دہلی۔ ۳۰؍دسمبر: دہلی پولیس نے شہریت ترمیمی قانون کے خلاف احتجاج کرنیوالوں گولی مارنے کی دھمکی دینے والے سابق اہلکارکوگرفتارکرلیاہے۔ اس کی شناخت راکیش تیاگی کی حیثیت سے ہوئی ہے اور وہ اترپردیش کے باغپت کا رہنے والا ہے۔ دہلی پولیس کے مطابق راکیش تیاگی 2014 میں وی آر ایس لے چکاہے۔ دراصل پولیس کا لباس پہنے اس سابق اہلکار کا ویڈیو گزشتہ دنوں سوشل میڈیا پروائرل ہواتھا۔یادرہے کہ کارمیں سفر کرتے ہوئے بنائے گئے وائرل ویڈیوراکیش تیاگی شہریت ترمیمی قانون کے خلاف احتجاج کرنے پرمظاہرین کو گولی مارنے کی دھمکی دے رہاہے اتناہی نے اس نے یہ بھی دعویٰ کیاہے کہ مرکزی وزارت داخلہ نے احتجاجیوں کو گولی مارنے کی ہدایت دی ہے۔ سوشل میڈیا پرصارفین سے ویڈیو پرکمنٹس کرتے ہوئے ناراضگی کا اظہارکررہے ہیں۔راکیش تیاگی نے کہا کہ اس پر یا اس کے کسی اہلکار پر کوئی اینٹ پھینکی گئی تو وہ اسکا جواب اینٹ سے نہیں دے گا بلکہ گولی مار دے گا اور اس اینٹ سے رام بندر بنائے گا۔تاہم دہلی پولیس نے راکیش تیاگی کو گرفتار کرلیاہے اور بعد میں اسے ضمانت پررہا کردیا گیاہے۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

متعلقہ خبریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close