اہم خبریں

دہلی تشدد: مولانا کلب جواد کی ’مودی بھگتی‘ بے نقاب

[ad_1]

قومی راجدھانی کے شمال مشرقی علاقے میں ہوئے فرقہ وارانہ فساد کو لے کر مرکز کی مودی حکومت اور اس کی نظریاتی تنظیم آر ایس ایس پر ملک اور بیرون ملک سے جاری لعنت و ملامت کے درمیان ہندوستان کے کچھ مذہبی رہنماؤں کی ٹولی بی جے پی حکومت کے دفاع میں اتر آئی ہے۔ اس کی تازہ مثال مسلم پرسنل لاء بورڈ کے رکن اورمعروف عالم دین مولانا کلب جواد ہیں۔ جنہوں نے بی جے پی کے لیڈروں کی مبینہ زہرافشانی کے سبب شمال مشرقی دہلی کے علاقے میں بھڑکے خوفناک فرقہ وارانہ فساد کے لئے مودی حکومت کو کلین چٹ دی ہے۔

[ad_2]
Source link

Tags

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

Leave a Reply

Back to top button
Close
Close