دربھنگہ

گوہر شاہی کا خدائی دعویٰ عالم اسلام کیلئے بڑا چیلنج علماء دفاع کریں:مولانا ارشد ندوی

بیرول،23/فروری(ریاض احمداشاعتی)اسلامی تاریخ کے مطالعے سے پتہ چلتا ہے کہ دور نبوی کے بعد فتنوں نے جنم لینا شروع کیا اور اختلافات بڑھ تے چلے گئے اسی طرح کچھ پاپیوں نے نبوت کا دعویٰ بھی کیا مسیلمہ کذاب سے لیکر غلام قادیانی تک،اب گوہر شاہی نے بھی کچھ ایسا ہی ڈرامہ کر رکھا ہے مذکورہ باتیں جمعیت ایمہ ہند کے صدر متھلانچل کے جید عالم دین مولانا ارشد ندوی نے عالم اسلام کے موجودہ فتنہ کادفاع،کرنے کی اپیل کرتے ہوئے کہی ہےمزید مولانا نے کہاکہ اگر اس فتنہ کو جلد از جلد نہ روکا گیا تو یہ فتنہ بہت بڑا چیلنج ہوگا اور ملت اسلامیہ کی نئ نسلوں کے عقائد کے لیے خطرناک ہوگا چونکہ اسکا دعویٰ عجیب ہے اور اس کے مریدین بھی عجیب،کبھی سورج میں اسکا چہرہ دکھلایا گیاتو کبھی چاند میں تو کبھی کالے پتھر میں اور اس طرح سے امت کو گمراہ کرنے کی کوشش کی گئی ہےمگر یہ بات یاد رہے کہ پوری ملت اسلامیہ کا اس عقیدہ پر اتفاق ہے کہ نبوت کا دروازہ بند ہے قیا مت تک کوئی نبی نہیں آنے والے،اور اگر کوئی دعویٰ کرے تو وہ چھوٹا اور کافر ہے،لہذا موجودہ فتنہ کو روکنے کے لئے علماء کرام آگے آنا ہے اور اس فتنہ کو جڑ سے اکھاڑ پھینکنا ہے۔واضح رہے کہ اس طرح کے ہزاروں گوہر شاہی آینگے مگر وہ نبی صلی اللہ علیہ وسلم کی راہ کے خلاف ہونگےاور وہ سب گمراہ ہو نگے کبھی منزل پر نہیں پہنچ سکتے ہیں۔خلاف راہ پیغمبر قدم جو بھی اٹھا یگا،کبھی راستہ نہ پائے گا کبھی منزل نہ پائے گا۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close