دربھنگہ

دربھنگہ:مندر پجاری کا بہیمانہ قتل،چار حملہ آوروں نے انجام دیا واقعہ، بھاگ رہے ایک بدمعاش پیٹ پیٹ ہلاک کردیاگیا ، 2بدمعاش کی حالت سنگین

دربھنگہ؍پٹنہ ، 14اکتوبر (ہندوستان اردو ٹائمز) دربھنگہ کے راج کمپلیکس میں واقع کنکالی مندر کے سربراہ پجاری راجیش جھا(45) کو بدمعاشوں نے گولی مار کر ہلاک کردیا۔یہ واقعہ جمعرات کی صبح تقریباً4.30 بجے پیش آیا۔ اس دوران مسلح جرائم پیشہ نے پجاری کو بچانے آئے ایک عقیدت مند شمبھو جھا کو بھی گولی مار دی گئی ، اس کی حالت نازک ہے۔ پجاری نوراتری کا ’ورت‘ رکھے ہوا تھا۔ اس واقعے کے بعد مقتول پجاری کے اہل خانہ کا رو روکر برا حال ہے ۔ بتایا جارہا ہے کہ 4 مسلح جرائم پیشہ کار سے آئے تھے۔ واقعے کے بعد بھاگ رہے 3جرائم پیشہ کو آس پاس کے لوگوں نے پکڑ لیا اور انہیں لات ، گھونسے، لاٹھیوں اور ڈنڈوں سے بری طرح مارا ،جس میں ایک کی موت ہوگئی، دو کی حالت نازک ہے۔

تاہم بدمعاشوں میں سے ایک بدمعاش فرار ہونے میں کامیاب ہوگیا۔ پولیس ابھی تک واقعہ کی وجہ معلوم نہیں کر سکی ہے۔ شرپسندوں کی بھی شناخت نہیں ہوسکی ہے۔ کچھ لوگوں کا کہنا ہے کہ پجاری کے بھتیجے کا بدھ کی شام کچھ لوگوں کے ساتھ موبائل پر جھگڑا ہوا تھا۔ایس ایس پی بابورام نے واقعہ کی اطلاع ملتے ہی مندر کے احاطے کا معائنہ کیا۔ اس سے قبل صدر ایس ڈی پی او کرشنانندن بھی موقع پر پہنچ چکے تھے۔ ایس ڈی پی او نے واقعہ میں دو ہلاکتوں اور تین زخمیوں کی تصدیق کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ پولیس معاملہ کی جانچ کر رہی ہے۔ زخمی عقیدت مند کو پارس اسپتال میں داخل کیا گیا ہے،جبکہ دونوں مجرموں کو ڈی ایم سی ایچ میں داخل کرایا گیا ہے۔ مرنے والوں اور زخمیوں کی شناخت ابھی باقی ہے۔ وہ پولیس کی نگرانی میں زیر علاج ہے۔ دونوں کی حالت تشویشناک ہے۔ واضح ہو کہ موقع سے ایک پستول اور 2-3 کارتوس برآمد ہوئے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق بدھ کی شام ایک نامعلوم شخص کا موبائل فون پر سے پجاری کے بھتیجے سے کچھ جھگڑا ہوا۔ ان کا کہنا ہے کہ شراب کی ممانعت کے بعد مندر کے آس پاس کے علاقہ میں شام کے وقت میں شراب کے عادی لوگوں کی بھیڑ ہوتی ہے ۔ ان میں سے ایک نے فون کرنے کے لیے موبائل مانگا ،جس پر موبائل فون پجاری کے بھتیجے نے نہیں دیا ۔اس معاملے پر دونوں کے درمیان جھگڑا ہوگیا۔اس دوران پجاری راجیو جھا بھی مدد کے لیے آگئے۔ معاملہ لڑائی تک جا پہنچا۔ حملے کے دوران اس شخص کے سر پر چوٹ آئی تھی۔

لوگوں کا کہنا ہے کہ جمعرات کی صبح 4.30 بجے تین دیگر افراد نے مندر کے احاطے میں سوئے ہوئے پجاری کو گولی مار دی۔مقتول کے پڑوسی ابھیشیک جھا نے بتایا کہ مندر میں گولیوں کی آواز سن کر وہ بھاگ کر یہاں پہنچے۔ دیکھا کہ پجاری کو گولی لگی ہے۔ اسے فوری طور پر نجی ہسپتال لے جایا گیا۔ وہاں ڈاکٹر نے اسے مردہ قرار دیا۔واضح ہوکہ انتظامیہ نے اس معاملہ کی ہر طرح سے تفتیش کرکے مجرموں تک پہنچنے کی یقین دہانی کرائی ہے۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

Leave a Reply

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close