دیوبند

دارالعلوم دیوبند میں نئے تعلیمی سال میں داخلہ کیلئے طلبہ کا ہجوم

گزشتہ دو دنوں میں داخلہ کے خواہشمند پانچ ہزار طلبہ کو داخلہ فارم تقسیم کئے گئے

دیوبند، 5؍ مئی (رضوان سلمانی) عالم اسلام کی ممتاز دینی درسگاہ دارالعلوم دیوبند میں جدید داخلہ کے لئے فارموں کی تقسیم شروع ہو گئی ہے، جس کے لیے ملک بھر سے داخلے کی خواہش لیکر دارالعلوم دیوبند پہنچے طلباء میں کافی جوش و خروش ہے۔ گزشتہ دو دنوں میں ہی ساڑھے چار ہزار سے زائد داخلہ فارم تقسیم ہوچکے ہیں۔کورونا وباء پھیلنے کے سبب گزشتہ دو سالوں سے دارالعلوم دیوبند میں نئے داخلے نہیں ہوئے تھے اور اس بار ادارے کی جانب سے داخلہ قوانین میں کئی ترمیم کے ساتھ نئے داخلے لینے کا اعلان کیا گیاہے جس کے لیے رمضان کے آخری عشرے سے ہی یہاں ملک بھر سے طلباء ملک بھر سے دیوبند پہنچنا شروع ہوگئے تھے۔

دارالعلوم کی جانب سے 4؍ مئی سے درخواست فارم داخلہ کی تقسیم شروع کی گئی، داخلوں کا یہ سلسلہ الگ الگ جماعتوں کے لیئے 11؍ مئی تک چلے گا، دارالعلوم کے شعبہ تعلیمات کے مطابق ابھی تک الگ الگ جماعتوں میں داخلوں کے لئے 4500 سے زائد داخلہ فارم تقسیم ہوچکے ہیں۔ اس مرتبہ داخلہ لینے والوں کی تعداد بہت زیادہ ہونے کی وجہ سے داخلہ فارم تقسیم کرنے کے لئے پانچ کاؤنٹر لگائے گئے ہیں، ایک کاؤنٹر پر ایک دن میں 400؍ سے 500؍ داخلہ فارم تقسیم کئے جا رہے ہیں۔دارالعلوم کے شعبہ تعلیمات کے اعلان کے مطابق آئندہ 11؍ مئی تک سبھی جماعتوں کے لئے فارم بھر کر جمع کرنا لازمی ہے جس کے بعد فارموں کی جانچ کی جائیگی اور جن طلبہ کے فارم درست پائے جائیں گے اُنکے کے لئے تحریری اور تقریری امتحان منعقد ہونگے، امتحان میں کامیابی حاصل کرنے والے طلبہ کو ہی داخلہ دیا جائے گا۔

واضح ہو کہ دارالعلوم دیوبند میں ہر سال تقریباً دس سے بارہ ہزار خواہشمند طلبہ فارم بھرتے ہیں لیکن میرٹ کی بنیاد پر داخلہ ڈیڑھ سے دو ہزار طلبہ کو ہی دیا جاتا ہے حالانکہ پچھلے دو سالوں میں نئے داخلے نہیں ہوئے ہیں اس لیے اس سال داخلوں کا کوٹہ بڑھائے جانے کی امید ہے۔وہیں آئی ڈی اور آدھار کارڈ وغیرہ کے لیے بھی اس سال ادارے کی طرف سے کافی سخت قانون بنائے گئے ہیں اور فرضی آئی ڈی یا دستاویز جمع کرنے پر طلبہ کو جہاں داخلہ نہیں دیا جائیگا وہیں ایسے طلبہ کے خلاف قانونی کارروائی کا انتباہ بھی دیا گیا ہے۔

ہماری یوٹیوب ویڈیوز

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button