دہلیعجیب و غریب

خاتون کی اجتماعی عصمت دری، 4 ریلوے ملازمین گرفتار

نئی دہلی،23جولائی (ہندوستان اردو ٹائمز) نئی دہلی ریلوے اسٹیشن پر خاتون کے ساتھ اجتماعی زیادتی کا معاملہ سامنے آیا ہے۔ اس معاملے میں پولیس نے چار ملزمان کو گرفتار کیا ہے۔اجتماعی عصمت دری کا واقعہ پلیٹ فارم نمبر 8-9 پر ٹرین کی لائٹنگ ہٹ میں پیش آیا ہے۔ بتایا گیا ہے کہ دو افراد نے ایک خاتون کے ساتھ اجتماعی زیادتی کی، جب کہ دو افراد باہر کھڑے ہو کر پہرہ دے رہے تھے۔ یہ تمام ملزمان ریلوے کے الیکٹرک ڈیپارٹمنٹ کے ملازم ہیں۔

ڈی سی پی (ریلوے) ہریندر سنگھ کے مطابق، واقعہ کی اطلاع 21-22 جولائی کی رات 3:27 بجے ملی۔ پرانی دہلی ریلوے اسٹیشن تھانے میں ایک خاتون نے فون کیا اور بتایا کہ اسے 2 افراد نے زیادتی کا نشانہ بنایا، خاتون نے بتایا کہ وہ نئی دہلی ریلوے اسٹیشن کے پلیٹ فارم نمبر 8-9 پر کھڑی ہے۔ پولیس ٹیم فوری طور پر موقع پر پہنچ گئی۔موقع پر 30 سالہ متاثرہ نے بتایا کہ وہ فرید آباد کی رہائشی ہے۔ اس کی اپنے شوہر سے 2 سال قبل طلاق ہوگئی تھی۔ وہ ایک دوست کے ذریعے ملزم سے رابطے میں آئی۔ ملزم نے بتایا تھا کہ وہ ریلوے میں کام کرتا ہے اور اسے نوکری دلائے گا۔ اس کے بعد دونوں باتیں کرتے رہے۔21 جولائی کو ملزم نے متاثرہ کو فون کیا اور بتایا کہ اس نے نیا گھر لیا ہے اور اس کے بیٹے کی سالگرہ کی پارٹی بھی ہے، اس لیے وہ آجائے۔ متاثرہ لڑکی 21 جولائی کی رات 10:30 بجے کیرتی نگر میٹرو اسٹیشن پر میٹرو سے نیچے اتری، جہاں سے ملزم اسے اپنے ساتھ نئی دہلی ریلوے اسٹیشن کے پلیٹ فارم نمبر 8-9 میں بنی جھونپڑی میں لے گیا۔ یہ جھونپڑی ریلوے کے الیکٹریکل کے انتظامیہ عملہ کے لیے بنائی گئی ہے۔

الزام ہے کہ اس جھونپڑی میں 12:30 بجے کے بعد 2 ملزمان نے باری باری اس کی عصمت دری کی جب کہ 2 ملزم باہر کھڑے اس کی حفاظت کر رہے تھے۔پولیس نے مقدمہ درج کر کے 2 گھنٹے میں ملزم کو گرفتار کر لیا۔ ملزمان میں ستیش کمار (35 سال)، ونود کمار (38 سال)، منگل چند (33 سال) اور جگدیش چند (37 سال) شامل ہیں۔ ان میں سے ستیش متاثرہ کے رابطے میں تھا۔

ہماری یوٹیوب ویڈیوز

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button