حیدرآباد

11 اور 12 جنوری کو نرمل میں دوروزہ آل تلنگانہ وآندھرا تبلیغی اجتماع ، تیاریاں مکمل ، ہفتے سے اجتماع کا آغاز!

حیدرآباد ۔ 10 جنوری 2019 (مفتی احسان شاہ قاسمی) زبان پر ذکر الٰہی ، آنکھوں میں شب بیداری کے آثار، پیشانیوں پر سجدوں کے نشان، کاندھوں پر بستر، ایک ہاتھ میں ضروری سامان اور دوسرے ہاتھ میں تسبیح لیے بے شمار قافلے اپنے مخصوص انداز اور ترتیب سے آج پوری دنیا میں ملک ملک شہر شہر، نگرنگر اور قریہ قریہ اپنے قدموں کو دینِ اسلام کی ترویج و اشاعت کیلئے اللہ کے راستے میں بڑی دلسوزی کے ساتھ گرد آلودہوتے ہوئے امت کے ایک ایک فرد کے دروازے پردستک دیتے ہوئے نظر آئیں گے، ان قافلوں کو عرف عام میں ’’تبلیغی جماعت‘‘ کہا جاتا ہے چوبیس گھنٹوں میں کوئی ایسا وقت اور لمحہ نہیں گزرتا جس میں تبلیغی جماعت کی نقل وحرکت پوری دنیا میں کہیں نہ کہیں جا ری نہ ہو،۔۔۔۔۔ دعوت وتبلیغ کی انہی محنتوں اور کوششوں کی ایک اہم کڑی تبلیغی اجتماعات ہیں ۔
تبلیغی اجتماعات کے امتیازات وخصوصیات میں سے ایک اہم امتیاز یہ ہوتا ہے کہ اجتماع میں سرحدی، امتیازات، لسانی تعصبات اور گروہ بندیاں سب خاک میں مل جاتے ہیں ۔
یہاں سب بحیثیت مسلمان، امیر و غریب، حاکم و محکوم، گورا ہو یا کالا، عربی ہو یاعجمی، رنگ و نسل کے اختلافات سے بے نیاز ہو کر اللہ تعالیٰ کے حضور گڑگڑاتے اور سجدہ ریز ہو کر پوری دنیا کے مسلمانوں کی اصلاح، امت کے ایک ایک فرد کو جنت کی طرف لے جانے، غلبہ اسلام، خلافت راشدہؓ کے مقدس نظام کے عملی نفاذ، کشمیر وعراق، افغانستان وفلسطین سمیت دیگر ملکوں کے مظلوم مسلمانوں کی آزادی و کامیابی وطن عزیز کی سا لمیّت و استحکام اور دین کیلئے محنت کرنے کی دُعااور اپنے گناہوں سے توبہ کرتے ہوئے نظر آئیں گے۔ اجتماع کا خاص فائدہ یہ ہے کہ آدمی اس کے ذریعے اپنے دائمی اور جامد ماحول سے نکل کر ایک نئے صالح اور متحرک دینی ماحول میں آجاتا ہے ۔
انہی ممتاز خصوصیات کا حامل ایک عظیم الشان دوروزہ آندھرا و تلنگانہ اجتماع ،11 اور 12 جنوری 2020 بروزِ ہفتہ واتوار نرمل سے سات کلو میٹر دور بھینسہ روڈ پر واقع موضع سرگاپورکی دوسو ایکر وسیع وعریض اراضی پر ہونے جارہا ہے۔
اس اجتماع میں تلنگانہ وآندھرا سے بالخصوص چار ماہ اللہ کے راستے لگانے والے ساتھی اور علمائے کرام کثیر تعداد میں شریک ہوں گے جبکہ نرمل واطراف کے باشندوں کے لیے یہ اجتماع عمومی رہے گا ،جس میں بنگلہ والی مسجد مرکز نظام الدین دہلی کے اکابرین دعوت وتبلیغ کے ایمان افروز خطابات ہوں گے، اجتماع گاہ کا پنڈال 12 لاکھ فٹ پر ڈالا گیا جس میں دولاکھ سے زائد افراد کے سمانے کی گنجائش ہوگی جبکہ اجتماع کے دونوں دن تین ٹائم لاکھوں افراد کے لیے کھانا فراہم کرنے کے لیے 21 طعام خانوں کا نظم کیا گیا ہے ،اور پانی سربراہی کے لیے 30 لاکھ لیٹر پانی کے 2 واٹر سمپ تیار کیے گئے اور وضو کی سہولت کے لیے دس ہزار وضو خانے بنائے گئے نیز ہنگامی طور معالجے کی غرض سے بیڈ والے 2دواخانے اور 4 طبی کیمپ لگائے جائیں گے واضح رہے کہ اصل اجتماع ہفتے کے دن صبح سے شروع ہوگا اور اختتامی بیان اتوار کے دن بعد نماز مغرب ہوگا اور رقت انگیز دعا پر اجتماع اختتام پذیر ہوگا۔
اس لیے تمام اہل ایمان سے دردمندانہ اپیل کی جاتی ہے کہ اجتماع کو غنیمت سمجھ کر اپنی شرکت کو یقینی بنائیں اور یہ ذہن نشین کرلیں کہ ’’وہ لمحات جو اللہ والوں کی صحبت میں گزر جائیں وہ لمحات قیمتی ترین متاعِ حیات، دنیا میں کامیاب زندگی گزرانے اور آخرت میں نجات کا ذریعہ بن جاتے ہیں‘‘۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close