حیدرآباد

آندھرا پردیش: وشاکھاپٹنم میں دو مختلف واقعات میں 2 بچوں سمیت 10 افراد کی موت ہوگئی

وشاکھا پٹنم ،16؍ اپریل (ہندوستان اردو ٹائمز) آندھرا پردیش کے وشاکھاپٹنم ضلع میں دو الگ الگ واقعات میں ایک خاندان کے چھ افراد اور دیگر خاندان کے چار افراد پراسرار حالات میں مردہ پائے گئے۔ وجاگ کی متھلا پوری کالونی کے 51 سالہ سنکاری بنگلورو نائیڈو ، ان کی اہلیہ سنکاری نرملا ، ان کا 19 سالہ بیٹا دیپک اور ایک اور 29 سالہ کشیپ گھر میں مردہ پائے گئے ہیں۔ نائیڈو بحرین میں تقریباً دس سال سے کام کررہا تھا۔ اس جوڑے اور ان کے چھوٹے بیٹے کے جسم پر دھاردار ہتھیار کے نشانات اور زخم ہیں ، جبکہ بڑا بیٹا باتھ روم میں سوٹ اور ٹائی پہنے ہوئے مردہ حالت میں پایا گیا ۔ خدشہ ہے کہ کنبہ کے ساتھ جھگڑے کے بعد بڑے بیٹے نے اس پر حملہ کیا اور پھر گھر کو آگ کے حوالے کردیا ، لیکن وہ خود کو نہیں بچاسکا۔اسی دوران پنڈورتی میں ایک 49 سالہ نوجوان کو اس کے پڑوسی کے گھرخون سے شرابور دھاردار اسلحہ کے ساتھ گرفتار کیا گیا ہے۔ خون سے شرابو چھ لوگوں کی لاشیں گھر سے برآمد ہوئی ہیں۔ مرنے والوں میں ایک 2 سالہ بچہ اور ایک چھ ماہ کا بچہ بھی شامل ہے۔ملزم کی شناخت اپلاراجو کے نام سے ہوئی ہے۔ بتایا جارہا ہے کہ وہ اپنی 33 سالہ شادی شدہ پڑوسی سے ناراض تھا ، کیوں کہ اس نے اس کی بیٹی کے ساتھ مبینہ طور پرعصمت دری کی تھی۔ متوفی کے تین بچے بھی تھے۔ ملزم ضمانت پر باہر تھا۔ جب یہ واقعہ پیش آیا تو وہ اور اس کا بڑا بیٹا گھر پر نہیں تھے۔

Urdutimes@123

ہندوستان اردو ٹائمز پر آپ سب کا خیر مقدم کرتے ہیں

Leave a Reply

متعلقہ خبریں

Back to top button
Close
Close